امریکا کا طالبان کے ساتھ مل کر داعش کے خلاف کارروائیوں کا عندیہ

پینٹاگون: امریکا نے افغانستان میں طالبان کے ساتھ مل کر داعش کے خلاف کارروائیاں جاری رکھنے کا عندیہ دیا ہے۔واشنگٹن میں پریس کانفرنس کے دوران امریکی جوائنٹ چیفس آف اسٹاف جنرل مارک ملی کا کہنا تھا کہ امریکا مستقبل میں افغان طالبان کے ساتھ مل کر افغانستان میں داعش اور دیگر دہشت گرد تنظیموں کے خلاف کاررائیوں میں حصہ لے سکتا ہے۔

امریکی جنرل نے کہا کہ طالبان کے ساتھ محدود روابط ہیں جس کا مقصد افغانستان سے شہریوں کا محفوظ انخلا ممکن بنانا تھا کیوں کہ یہ ضروری نہیں کہ جنگ میں جیسا آپ چاہتے ہوں ویسا ہی ہو بلکہ اپنے مشن اور فورسز کو پیش خطرات کو کم کرنے کے لیے فیصلے کرنا پڑتے ہیں۔

اس موقع پر امریکی وزیر دفاع جنرل لائیڈ آسٹن کا کہنا تھا افغانستان میں داعش کی سرگرمیوں پر نظر رکھنے کے لیے ہر ممکن کام کریں گے تاہم داعش کے خلاف کارروائی کے لیے طالبان سے تعاون کے بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتا، اس کے علاوہ طالبان حکومت کے ساتھ تعلقات استوار کرنے کے بارے میں آئندہ چند دنوں میں پالیسی واضح ہوگی۔

About BBC RECORD

Check Also

افغانستان میں امن قائم کرنا تمام ممالک کی اجتماعی ذمہ داری ہے، جنرل ندیم رضا

Share this on WhatsAppاسلام آباد: چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل ندیم رضا نے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے