تازہ جھڑپ میں آرمینیا کے 3 فوجی ہلاک اور آذربائیجان کے 2 اہلکار زخمی

نگورنو کاراباخ: آرمینیا کی فوج نے الزام عائد کیا ہے کہ آذربائیجان کی فوج کی بلاجواز اشتعال انگیزی میں ہمارے 3 اہلکار ہلاک اور 2 زخمی ہوگئے۔ خبر رساں ادارے کے مطابق آذربائیجان اور آرمینیا کے درمیان متنازع علاقے کے قبضے کے لیے ہونے والی ہلاکت خیز جنگ کے بعد اب بھی جھڑپوں کا سلسلہ جاری ہے۔ تازہ جھڑپ میں آرمینیا کے 3 فوجی اہلکار ہلاک اور آذربائیجان کے دو فوجی زخمی ہوگئے۔

دونوں ممالک تازہ جھڑپ میں اشتعال انگیزی اور فائرنگ میں پہل کرنے کا الزام ایک دوسرے پر عائد کر رہے ہیں۔آرمینیا کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اسٹاک کے ایک گاؤں کی سرحدی خلاف ورزی کرتے ہوئے آذربائیجان کی فوج نے پیش قدمی کی اور روکنے پر فائرنگ کردی جس میں ہمارے 3 فوجی ہلاک اور 2 زخمی ہوگئے۔

دوسری جانب آذربائیجان کی وزارت دفاع کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ کلباجار ضلع میں آرمینیا کی فوج نے بلاجواز ہماری سرزمین کی جانب گولیاں برسائیں جس میں دو فوجی اہلکار زخمی ہوگئے۔ ہماری جنگ بندی کی پاسداری کو کمزوری نہ سمجھا جائے۔واضح رہے کہ گزشتہ برس متنازع علاقے نگورنو کاراباخ کے قبضے کیلیے 6 ہفتوں تک جاری رہنے والی جنگ روس کی مداخلت کے باعث نومبر میں ایک معاہدے کے تحت آرمینیا کے ہتھیار ڈالنے پر ختم ہوگئی تھی

About BBC RECORD

Check Also

افغانستان میں امن قائم کرنا تمام ممالک کی اجتماعی ذمہ داری ہے، جنرل ندیم رضا

Share this on WhatsAppاسلام آباد: چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل ندیم رضا نے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے