کورونا پھیلاؤ والے علاقوں میں لاک ڈاؤن کا فیصلہ؛ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر

ڈاکٹر ذولفقار کاظمی

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ اسلام آباد

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے ملک میں کورونا وبا کی تیسری لہر کے باعث وبا کے زیادہ پھیلاؤ والے علاقوں میں 29 مارچ سے لاک ڈاؤن جب کہ 5 اپریل سے ملک بھر میں شادی کی انڈور و آؤٹ ڈور تقریہبات پر پابندی لگادی ہے۔ این سی او سی کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کی زیرصدارت نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں کورونا پھیلاؤ والے علاقوں میں 29 مارچ پیر سے لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا گیا ۔

سماجی، ثقافتی اور سیاسی جلوسوں سمیت تمام تقریبات پر مکمل پابندی لگادی گئی ہے تاہم ملک بھرمیں انڈور اور آؤٹ ڈور شادی کی تقاریب پر پابندی 5 اپریل سے ہوگئی، این سی او سی کی عائد پابندیاں فوری طور پر نافذہوں گی جب کہ صوبے اس سے پہلے حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے پابندی لگا سکتے ہیں، صوبے این سی اوسی کے دیے گئے ویکسی نیشن ہدف کو بروقت پورا کریں۔ اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ بین الصوبائی ٹرانسپورٹ سے متعلق حتمی فیصلہ صوبوں کی مشاورت سے کیا جائے گا،تمام زمینی، فضائی اور ریلوے کا ڈیٹا دیکھ کر فیصلہ کیا جائے گا۔

دوسری جانب وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کی جانب سے کی گئی ٹوئٹ میں کہا گیا ہے کہ کورونا کی تیسری للہر کے پییش نظر این سی او سی کا اجلاس ہوا، جس میں تمام صوبائی چیف سیکریٹریز نے شرکت کی، اجلاس میں کورونا کی موجودہ صورت حال پر تفصیلی غور کیا گیا۔ اجلاس کے دوران ملک میں کورونا وبا کے ایک مرتبہ پھر تیزی سے پھیلنے کی بنیاد پر مزید سخت اقدامات کا فیصلہ کیا گیا۔اسد عمر نے کہا کہ اجلاس میں چیف سیکریٹریز کو ہدایت کی گئی کہ کورونا ایس او پیز پر سختی سے عمل کو یقینی بنایا جائے، اس کے ساستھ ہی وہ عوام سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ انتظامیہ کا ساتھ دیں کیونکہ ایس او پیز کا اطلاق ہماری زنگینوں کے تحفظ کے لیے کررہے ہیں۔

About BBC RECORD

Check Also

پاک سعودیہ تعاون خطے کی سلامتی پر مثبت اثرات لائے گا، آرمی چیف

Share this on WhatsAppبی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ اسلام آباد پاک فوج کے سربراہ ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے