اسمگلنگ بے نقاب کرنیوالے صحافی کو پولیس دھمکانے لگی

تجمل حسین

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ کراچی

پاکستان میں صحافت کرنا انتہائی مشکل ہوگیا ہے پنجاب کے بعد اب سندھ میں صحافی عدم تحفظ کا شکار ہیں گزشتہ روز ایرانی ڈیزل اور پیٹرول کی اسمگلنگ کو بے نقاب کرنے والا صحافی پولیس کے عتاب کا شکار ہوگیا جب کہ تحفظ کی درخواست پر سندھ ہائی کورٹ نے سیکریٹری وفاقی اسٹیبلشمنٹ ڈویژن، آئی جی سندھ، محکمہ داخلہ اور دیگر کو نوٹس جاری کردیے۔جسٹس اقبال کلہوڑو کی سربراہی میں بینچ کے روبرو مقامی صحافی عجیب لاکھو نے تحفظ سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی،عدالت نے فریقین سے 23 جنوری کو جواب طلب کرلیا، صحافی نے بلوچستان کے راستے سندھ میں پولیس کی ملی بھگت سے ایرانی ڈیزل اور پٹرول اسمگلنگ کو بے نقاب کیا تھا۔

دائر درخواست میں موقف اپنایا گیا ہے کہ سندھ پولیس اعلیٰ سطح انکوائری میں بھی پولیس افسران کو ایرانی ڈیزل اور پٹرول اسمگلنگ میں ملوث قرار دے چکی ہے، تیل کی اسمگلنگ کا اہم کردار ڈی آئی جی اقبال کو صوبہ بدر کرنے کی سفارش کی گئی تھی، خبروں کے ذریعے افسران کو بے نقاب کرنے کے بعد کئی پولیس افسران صحافی کی جان کے دشمن بن چکے ہیں، پولیس مختلف ذرائع سے جان سے مارنے کی دھمکیاں دے رہی ہے، خدشہ ہے ایس پی سکھر عرفان سموں مجھے قتل کرکے لاش کہیں پھینک دے گا، عدالت سے استدعا ہے تحفظ فراہم کیا جائے۔
اس سے قبل صوبہ پنجاب کے ڈویژن ڈی جی خان کے ضلع مظفر گڑھ میں صحافی ملک نظام تانی کو نامعلوم افراد نے فائرنگ کر کے قتل کردیا تھا جس کے ملزمان تاحال گرفتار نہ ہوسکے ہیں
بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ ڈی جی خان کے بیوروچیف پر چند روز قبل تھانہ چوٹی کے علاقہ میں حملہ کیا گیا تھا پولیس ملزمان کو گرفتار کرنے کی بجائے تحفظ دے رہی ہے

About BBC RECORD

Check Also

قانون کو ہاتھ میں لینے والوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا؛ کیپٹن ر ظفر اقبال اعوان

Share this on WhatsAppملتان ( شبیر خان سدوزئی) ایڈیشنل انسپکٹر جنرل پولیس جنوبی پنجاب کیپٹن ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے