خطے میں ایرانیوں کے تخریبی برتائو کا محاسبہ کریں گے: امریکی ایلچی

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ واشنگٹن
اقوام متحدہ میں امریکا کی خصوصی نمائندہ کیلی کرافٹ نے عربی چینل کے ساتھ ایک خصوصی انٹرویو میں کہا ہے کہ سعودی عرب کی سب سے بڑی تیل کمپنی آرامکو پر حملہ ایران کے خطے کو غیر مستحکم کرنے کے رویے کا ثبوت ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خطے میں تخریبی کردار پر واشنگٹن ایرانیوں کا محاسبہ کرے گا اور انہیں ان کے رویے پر جوابدہ ٹھہرائے گا۔انہوں نے کہا کہ امریکا ایران پر عائد اسلحہ کی پابندی میں توسیع کے خواہاں ہے۔ یہ پابندیاں 2015ء کو طے پائے جوہری معاہدے کے تحت اکتوبر میں ختم ہونے والی ہیں۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ واشنگٹن اسلحے کی پابندی میں توسیع کے لیے تمام تر وسائل اور ذرائع استعمال کرے گا۔

اقوام متحدہ میں واشنگٹن کی مندوبہ کیلی کرافٹ کا کہنا تھا کہ ایران کا جوہری پروگرام پرامن نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ واشنگٹن عراق میں ایرانی جبر کی اجازت نہیں دے گا۔ایک سوال کے جواب میں مسز کرافٹ کا کہنا تھا کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے ایرانی حکومت کا مقابلہ کرنے کے لیے تمام وسائل کا استعمال کیا صدر ٹرمپ نے واضح کیا کہ ایران پر پابندیوں کا ہدف ایرانی عوام نہیں بلکہ حکمران طبقہ ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ روس اور چین نے شام میں انسانی امداد پر سیاست کی۔ کرافٹ نے مزید کہا کہ ہم نے ادلب میں بے گھر ہونے والے لوگوں کی صورتحال سے سلامتی کونسل کو آگاہ کیا ہے۔ کرافٹ نے مزید کہا کہ شام میں انسانیت کی صورتحال انتہائی پریشان کن ہے۔ایک ہفتہ قبل امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا تھا کہ ایران پر اسلحہ کی پابندی ختم کرنے سے خطے میں تناؤ بڑھے گا۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ واشنگٹن ایران کو دوبارہ خطے کو غیر مستحکم کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔پومپیو نے مزید کہا کہ دنیا کی حکومتیں ایران کے جدید ہتھیاروں کے حصول کو مسترد کرتی ہیں۔ ایران نے موجودہ پابندیوں کی پاسداری نہیں کی ہے اور خلاف ورزیوں کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔

About BBC RECORD

Check Also

ولی عہد محمد بن سلمان پاکستان کا دورہ کرنے کے خواہشمند ہیں، سعودی وزیرخارجہ

Share this on WhatsAppریاض: سعودی وزیرخارجہ نے کہا ہے کہ عمران خان کادورہ سعودی عرب ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے