FILE PHOTO - Taliban new leader Mullah Haibatullah Akhundzada is seen in an undated photograph, posted on a Taliban twitter feed on May 25, 2016, and identified separately by several Taliban officials, who declined be named. Social Media/File Photo ATTENTION EDITORS - THIS IMAGE WAS PROVIDED BY A THIRD PARTY. EDITORIAL USE ONLY

تحریک طالبان کے امیر کا افغان شہریوں سے شجر کاری کا مطالبہ

افغان طالبان کے امیر ملا ہیبت اللہ اخوندزادہ نے اپنے ایک بیان میں افغان شہریوں اور جنگجوؤں پرملک بھر میں شجر کاری میں حصہ لینے پر زور دیا ہے۔ جنگ جو گروپ کی طرف سے یہ اپنی نوعیت کا منفرد مطالبہ ہے۔
انھوں نے کہا کہ: ‘ایک درخت یا کئی درخت لگاؤ، چاہے وہ پھل دینے والا ہو یا نہ ہو، تاکہ یہ زمین خوبصورت بنے اور اللہ کی مخلوق کو فائدہ ہو۔’
یاد رہے کہ افغانستان میں جنگلات کی کٹائی ایک سنگین مسئلہ ہے۔ درختوں کو کٹائی کے بعد غیر قانونی طور پر بیچ دیا جاتا ہے یا ان کو سردیوں میں جلانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔
پیغام میں کہا گیا تھا کہ ‘درخت لگانے سے ماحول کو تحفظ ملتا ہے، معاشی ترقی پروان چڑھتی ہے اور زمین کی خوبصورتی میں اضافہ ہوتا ہے۔ درخت لگانے سے اور کھیتی باڑی ایسے کام ہیں جن کا صلہ دنیا میں بھی ملتا ہے اور آخرت میں بھی۔’
طالبان کی جانب سے ماحولیات پر بیانات ایک حیران کن بات ہے کیونکہ وہ ایسے بیانات شاذ و نادر ہی دیتے ہیں۔
پچھلے سال مئی میں ہبت اللہ اخوندزادہ افغان طالبان کے رہنما منتخب ہوئے تھے اور ان کی وجہ شہرت ایک عسکری ماہر کے بجائے ایک عالم دین کی حیثیت سے زیادہ ہے۔
یاد رہے کہ طالبان افغانستان کے موجودہ امیر ملا ھیبت اللہ اخوانزادہ کو گذشتہ برس مئی میں تنظیم کا نیا سربراہ چنا گیا تھا۔ وہ ملا اختر منصور کے بعد تحریک طالبان کے سربراہ منتخب ہوئے تھے۔ اختر منصور کوپاکستان اور ایران کی سرحد کے قریب ایک امریکی ڈرون حملے میں ہلاک کر دیا گیا تھا۔ تنظیم کا سربراہ منتخب ہونے کے بعد ملا ھیبت اللہ بہت کم منظرعام پر آتے ہیں۔
امریکی اتحادی فوجوں سے شکست کے بعد افغان طالبان کو مسلسل قومی دہارے میں شامل ہونے کی دعوت دی جاتی رہی ہیں لیکن انھوں نے ابھی تک رضا مندی ظاہر نہیں کی ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

ولی عہد محمد بن سلمان پاکستان کا دورہ کرنے کے خواہشمند ہیں، سعودی وزیرخارجہ

Share this on WhatsAppریاض: سعودی وزیرخارجہ نے کہا ہے کہ عمران خان کادورہ سعودی عرب ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے