چین میں سابق پولیس سربراہ کو رشوت ستانی کے جرم میں سزائے موت

بیجنگ چین کے شمالی منگولیا صوبے کے سابق پولیس سربراہ کو قتل، رشوت اور غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے معاملے میں قصوروار پائے جانے پر عدالت نے آج موت کی سزا سنائی ہے۔سرکاری میڈیا ایجنسی ڑن ہوا نے بتایا کہ شمالی شانڑی صوبے کی ایک عدالت نے سابق پولیس افسر جھاؤ لی پنگ (65) کو قتل، رشوت، غیر قانونی اسلحہ اور دھماکہ خیز مادہ رکھنے کے معاملے میں قصوروار قرار دیتے ہوئے موت کی سزا سنائی ہے۔ڑن ہوا نے بتایا کہ اس افسر کو اپنی خادمہ کے قتل اور لاش کو جلانے نیز 2008 سے 2010 کے دوران پولیس کے سربراہ کے عہدے پر رہنے کے دوران 29 ہزار ڈالر رشوت لینے اور دفتر میں 91 ڈیٹونیٹرس رکھنے کاقصوروار پایا گیا ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

ڈیرہ غازی خان؛ ایڈیشنل آئی جی جنوبی پنجاب کا دورہ لیہ پل شیخانی 7 افراد کے قتل کے لواحقین سے تعزیت تک نہ کی

Share this on WhatsAppFollow @cmsvoteup Share on TwitterShare on FacebookShare on Google+ Share this on ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے