عمران خان کا افغان صورتحال پر سعودیہ، امارات اور قطر کے حکمرانوں سے رابطہ

اسلام آباد؛ وزیراعظم عمران خان کا افغانستان کی صورتحال پر سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اور ابوظہبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید سے ٹیلی فونک رابطہ ہوا جس میں دوطرفہ امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ سرکاری اعلامیے کے مطابق ابوظہبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید سے گفتگو کے دوران وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان متحدہ عرب امارات کے ساتھ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے، پر امن اور مستحکم افغانستان پاکستان سمیت خطے کے مفاد میں ہے، صرف جامع سیاسی تصفیہ کے ذریعے ہی افغانستان کے لوگوں کو تحفظ اور امن فراہم کیا جاسکتا ہے۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ عالمی برادری کو افغانستان کی معاشی مدد اور تعمیر نو میں کردار ادا کرنا چاہییے، افغانستان کو معاشی طور پر مضبوط کرنے کی ضرورت ہے۔وزیراعظم نے ایکسپو 2020ء کے لیے بہترین انتظامات کرنے پر ولی عہد کو مبارکباد پیش کی، وزیراعظم نے ایکسپو 2020ء کے انعقاد کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔گفتگو میں دونوں رہنماؤں نے مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے اور مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا۔

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے رابطہ

دریں اثنا وزیراعظم عمران خان نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے بھی ٹیلی فونک رابطہ کیا اور ان سے افغانستان کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔
سرکاری اعلامیے کے مطابق دونوں رہنماؤں نے افغانستان کی موجودہ صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔ دونوں رہنماؤں نے اتفاق کیا کہ انسانی المیے اور مہاجرین کے بحران سے بچنے کے لیے بین الاقوامی برادری کو کردار ادا کرنا چاہیے۔وزیراعظم عمران خان نے افغانستان کی فوری انسانی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے اقدامات پر زور دیا اور کہا کہ عالمی برادری افغان عوام کی معاشی اور ملک کی تعمیر نو میں مدد کرے، ایک پرامن اور مستحکم افغانستان پاکستان اور علاقائی استحکام کے لیے بہت ضروری ہے۔دونوں رہنماؤں نے افغانستان میں ایک جامع سیاسی تصفیے کی اہمیت اور تمام شعبوں میں دوطرفہ تعلقات بڑھانے کے لیے مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا۔وزیر اعظم نے اکتوبر میں ریاض میں ایم جی آئی تقریب میں شرکت کی دعوت پر ولی عہد کا شکریہ اور سعودی عرب کی خود مختاری اور علاقائی سا لمیت کے لیے پاکستان کی حمایت کا اعادہ کیا۔ وزیراعظم عمران خان نے خادم حرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے لیے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا۔

امیر قطر کو بھی ٹیلی فون

وزیراعظم عمران خان نے افغانستان کے معاملے پر امیر قطر تمیم بن حماد الثانی کو بھی فون کیا۔ وزیراعظم نے قطر کے ساتھ سیاسی اور اقتصادی شراکت داری کو مزید مستحکم کرنے کا اعادہ کیا۔وزیراعظم نے کوویڈ کی صورتحال میں قطر کی مدد کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاک قطر حکومت کا دولاکھ سے زائد پاکستانیوں کی کوویڈ صورتحال میں دیکھ بھال قابل تعریف اقدام ہے۔دونوں رہنماؤں نے دوطرفہ باہمی دلچسپی اورعلاقائی، بین الاقوامی امور پر رابطے میں رہنے پر اتفاق کیا۔

About BBC RECORD

Check Also

عمران نیازی پاکستان نہیں آئی ایم ایف کیلئے کام کررہے ہیں، شہبازشریف

Share this on WhatsApp بندیا اسحاق بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ لاہور قومی اسمبلی ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے