پی ٹی وی اینکرز کے حجاب کرنے پر وزیر اطلاعات کی وضاحت

اسلام آباد: پاکستان ٹیلی وژن نیٹ ورک کی 2 خواتین اینکرز نے حجاب شروع کردیا۔اس معاملے پر سوشل میڈیا پر پی ٹی آئی اور حکومت کے کارکنان نے کریڈٹ لینا شروع کردیا۔ سوشل میڈیا پر اسے حکومتی کارنامہ قرار دیتے ہوئے کہا گیا کہ وزیراعظم عمران خان نے سرکاری ٹی وی پی ٹی وی نیوز پر حجاب لازمی قرار دیدیا، جس کے نتیجے میں پی ٹی وی نیوز پر حجاب پہنے خاتون اینکر پرسن خبریں پڑھ رہی ہیں۔

تاہم حجاب کرنے سے متعلق وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ حجاب پہننا یا نہ پہننا ان خواتین اینکرز کا ذاتی فیصلہ ہے، ہم اپنے اینکرز اور پیش کاروں پر ایسا کوئی ڈریس کوڈ (ضابطہ لباس) نافذ نہیں کرسکتے۔

ایک وقت وہ بھی تھا جب پی ٹی وی پر مہتاب اکبر راشدی صاحبہ کے ڈوپٹہ نہ لینے پر چرچہ ہوا کرتا تھا ۔ اب یہ وقت ہے کہ کسی خاتون اینکر کے حباب لینے پر خبر بن رہی ہے۔ماضی میں بھی پی ٹی وی حجاب کے معاملے پر زیر بحث آچکا ہے۔ جنرل ضیاء کے دور میں ٹیلی ویژن پر آنے والی خواتین کو دوپٹہ لینے کا حکم دیا گیا تھا۔ اس پر مہتاب چنا نے یہ فیصلہ قبول کرنے سے انکار کرتے ہوئے پی ٹی وی پر آنا چھوڑدیا تھا۔

About BBC RECORD

Check Also

عمران نیازی پاکستان نہیں آئی ایم ایف کیلئے کام کررہے ہیں، شہبازشریف

Share this on WhatsApp بندیا اسحاق بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ لاہور قومی اسمبلی ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے