گنی میں چھاؤنی کے بارودی ذخیرے میں دھماکا، ہلاکتوں کی تعداد 100 ہوگئی

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ کوناکری

مغربی افریقی ملک استوائی گنی کی فوجی چھاؤنی میں گزشتہ روز زوردار دھماکے بعد ہونے والی خوفناک آتشزدگی میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد 100 سے تجاوز کرگئی جب کہ 500 سے زائد زخمی ہیں۔ رساں ادارے کے مطابق افریقی ملک گنی کی ایک فوجی چھاؤنی کے پاس دیہاتیوں نے کھیتوں میں آگ لگائی جو ہوا کے جھونکوں کے ذریعے چھاؤنی کے اندر غیر محفوظ طریقے سے ذخیرہ کیے بارودی مواد تک پہنچ گئی اور زوردار دھماکا ہو گیا۔

دھماکا اتنا طاقتور تھا کی باٹا شہر کے تقریباً تمام ہی مکانوں کو نقصان پہنچا ہے۔ اسپتال میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔ابتدائی طور پر 20 افراد ہلاک اور 600 سے زائد کے زخمی ہونے کی تصدیق کی گئی تھی تاہم اب ہلاک ہونے والوں کی تعداد 100 سے تجاوز کرگئی ہے۔
سرکاری ٹیلی وژن پر براہ راست خطاب میں صدر تیوڈورو اوبیانگ کا کہنا تھا کہ دھماکے ایک فوجی یونٹ کی لاپرواہی کی وجہ سے ہوئے۔ کھیتوں کو آگ لگانے والے کسانوں کی بھی غفلت شامل تھی۔گنی کا شہر باٹا اس وقت ایک کھنڈر کا نمونہ پیش کر رہا ہے جہاں ہر طرف تباہی ہے۔ مکانات اور گاڑیوں کے ڈھانچے نظر آرہے ہیں جب کہ اسپتال مریضوں سے بھر گئے ہیں۔

About BBC RECORD

Check Also

افغان جنگ کے نتائج پر پاکستان کو مورد الزام نہیں ٹھہرایا جاسکتا، وزیراعظم

Share this on WhatsAppاسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان کو افغانستان ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے