عوام کو انصاف دینے والی پنجاب پولیس کے آپس میں جھگڑے معمول بن گئے

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ لاہور

کیپٹل سٹی پولیس آفیسر (سی سی پی او) لاہور عمر شیخ نے اپنا رویہ نہ بدلا اور پنجاب پولیس کے ایک اور سینئر افسر سے جھگڑا کر بیٹھے۔عمر شیخ نے ایس ایس پی انویسٹی گیشن کے ساتھ میٹنگ میں نامناسب رویہ رکھا جس پر ایس ایس پی انویسٹی گیشن میٹنگ چھوڑ کر چلے گئے۔گزشتہ رات سی سی پی او نے اپوزیشن کے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) جلسے میں مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کی گرفتاریوں کے لیے بلارکھا تھا۔

اس دوران کسی بات پر تلخ کلامی ہوئی تاہم ڈی آئی جی انویسٹی گیشن نے بیچ بچاؤ کروایا۔ ایس ایس پی نے جھگڑے پر چارج چھوڑنے کا بھی فیصلہ کرلیا تھا۔
اس سے قبل اکتوبر میں عمر شیخ کا ایس پی سی آئی اے عاصم افتخار کمبوہ کے ساتھ ’جھگڑا‘ ہوا تھا جس پر ایس پی کا تبادلہ کردیا گیا تھا۔عمر شیخ اور افتخار کمبوہ کے درمیان نوبت گالم گلوچ تک پہنچ گئی تھی اور سینئر افسران نے بیچ بچاؤ کروایا تھا۔ اس وقت بھی پی ڈی ایم جلسے سے متعلق اجلاس میں یہ تنازع ہوا تھا۔

سی سی پی او لاہور موٹروے ریپ کیس میں نامناسب بیان دینے پر بھی خبروں میں آگئے تھے اور انہیں شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا۔عمر شیخ کو سی سی پی او لاہور بنانے پر اس وقت کے آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے بھی اعتراض کیا تھا جس کے بعد عمر شیخ نے آئی جی پنجاب کے خلاف باتیں کیں۔ اس جھگڑے کا نتیجہ بھی یہ نکلا تھا کہ آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کی چھٹی کردی گئی تھی۔ تاحال نا تجربہ کار انعام غنی کی آئی جی پنجاب تعیناتی سے حالات مذید خراب ہونے لگے

About BBC RECORD

Check Also

حکومت اور تحریک لبیک پاکستان کے درمیان مذاکرات کامیاب ہوگئے، شیخ رشید

Share this on WhatsAppڈاکٹر ذولفقار کاظمی بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ اسلام آباد وفاقی ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے