امریکی قومی سلامتی کے لیے خطرہ بننے والی ایرانی سرگرمیوں کو روکنے کے پابند ہیں : پومپیو

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے ایران کے ساتھ کسی بھی نوعیت کے تعامل سے خبردار کرتے ہوئے دھمکی دی ہے کہ ایسی صورت میں سخت پابندیوں کا سامنا کرنا ہو گا۔

ٹویٹر پر اپنی تازہ ترین ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ امریکا کا یہ پیغام واضح ہے۔پومپیو نے زور دیا کہ واشنگٹن اپنی قومی سلامتی کے لیے خطرہ بننے والی ہر ایرانی سرگرمی کو روکنے کا پابند ہے۔ایک دوسری ٹویٹ میں پومپیو نے کہا کہ ان کی توجہ اپنے یورپ اور مشرق وسطی کے آئندہ دوروں پر مرکوز ہے جہاں وہ اپنے ہم منصب عہدے داران کے ساتھ کئی اہم امور کے حوالے سے ملاقاتوں کا انعقاد کریں گے۔ ان امور میں ایران کے شرپسند رویے کا مقابلہ کرنا شامل ہے۔

امریکی وزارت خارجہ کی یہ ٹویٹس واشنگٹن کی جانب سے 6 کمپنیوں اور 4 شخصیات پر پابندیاں عائد کرنے کے اعلان کے بعد سامنے آئی ہیں۔ ان افراد اور اداروں پر یہ الزام ہے کہ انہوں نے حساس ساز و سامان خریدنے کے سلسلے میں ایک ایرانی عسکری کمپنی کو سہولیات پیش کیں۔ اس سامان میں ایرانی مواصلاتی کمپنی میں استعمال ہونے والی برقی لوازمات بھی ہیں۔ ایران کی مذکورہ عسکری کمپنی امریکا اور یورپی یونین کی بلیک لسٹ میں شامل ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

ایران پاکستان کے توانائی کے شعبے میں ضرورت پورا کرنے کے لئے تیار

Share this on WhatsAppایران کے سفیر نے پاکستان سے قریبی اور گہرے تعلقات سمیت تجارتی ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے