طرابلس: وفاق حکومت کی ملیشیا کے ہاتھوں لیبیائی ذرائع ابلاغ کے ادارے کا سربراہ اغوا

لیبیا میں وفاق حکومت کی مسلح ملیشیا نے منگل کی شب لیبیائی ذرائع ابلاغ کے ادارے کے سربراہ محمد بعیو کو گرفتار کر لیا۔ یہ اقدام اس فیصلے کے تناظر میں کیا گیا ہے جس میں "ليبيا الاحرار” ٹی وی چینل کے مالک سلیمان دوغہ کو تحقیقات کے لیے پیش کرنے کا تقاضا کیا گیا۔ مذکورہ شخصیت پر مالی رقوم کی ہیرا پھیری اور نا مناسب استعمال کے الزامات ہیں۔محمد بعیو نے واٹس ایپ پر گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ طرابلس میں مسلح عناصر نے ان کے گھر پر دھاوا بول دیا ہے۔ اس کے بعد گفتگو اور رابطہ اچانک ختم ہو گیا۔ بعد ازاں یہ اعلان کیا گیا کہ بعیو کو ان کے دو بیٹوں کے ساتھ اغوا کر لیا گیا ہے۔ بعیو کی ایک تصویر بھی جاری کی گئی جس میں وفاق حکومت کے زیر انتظام ملیشیا "ثوار طرابلس” کے ایک مرکز میں زیر حراست دکھائی دے رہے ہیں۔

منگل کے روز لیبیائی ذرائع ابلاغ کے ادارے کے سربراہ محمد بعیو نے سرکاری خبر رساں ایجنسی کو ایک پیغام بھیجا تھا۔ پیغام میں احکامات جاری کیے گئے کہ خانہ جنگی کے متعلق کسی بھی قسم کا مواد نشر کرنے کا سلسلہ حتمی طور پر روک دیا جائے اور ہر اس چیز کو نشر کرنا ختم کر دیا جائے جس سے نفرت پیدا ہو اور انتقام کی ثقافت مضبوط ہو۔ اقدام کا مقصد موجودہ سیاسی پیش رفت کو سپورٹ کرنا ہے جس کے ذریعے مکالمہ اور مذاکرات، لڑائی اور محاذوں کے متبادل کے طور پر سامنے آئے ہیں۔ محمد بعیو نے تمام چینلوں اور ریڈیو اسٹیشنوں کو دھمکی دی کہ اگر ان ہدایات کی پابندی نہ کی گئی تو ان کے خلاف مطلوبہ اقدامات کیے جائیں گے۔

اس فیصلے کے سامنے آنے کے بعد وفاق حکومت کے زیر انتظام مسلح ملیشیاؤں، الاخوان تنظیم کی قیادت اور ان کے حامیوں اور ان کے ہمنوا چینلوں نے اپنی توپوں کا رخ محمد بعیو کی جانب کر دیا۔ ان عناصر نے صدارتی کونسل سے بعیو کو ان کے منصب سے برطرف کرنے کا مطالبہ کیا۔لیبیا میں الاخوان تنظیم گذشتہ ماہ ستمبر میں اس وقت سے محمد بعیو کے ساتھ تنازع میں شامل ہو گئی جب وفاق حکومت کے سربراہ فائز السراج نے بعیو کو لیبیائی ذرائع ابلاغ کے ادارے کا سربراہ مقرر کیا۔ بعیو ماضی میں لیبیا کے مرکزی بینک کے گورنر الصدیق الکبیر کے میڈیا مشیر کے عہدے پر کام کر چکے ہیں۔ انہیں الاخوان تنظیم کی مخالف ایک اہم شخصیت اور لیبیا کی فوج کا حامی شمار کیا جاتا ہے۔ تاہم وہ سابق سربراہ کرنل معمر قذافی کی حکومت کے بھی منظور نظر رہے۔ بعیو صحافت کے شعبے میں کئی منصبوں پر فائز رہے۔ وہ الاخوان تنظیم کے ساتھ عدم مصالحت پر زود دینے والے بیانات کے سبب جانے جاتے رہے۔

About BBC RECORD

Check Also

نوازشریف کی واپسی کیلیے برطانیہ بھی جانا پڑا توجاؤں گا، وزیراعظم

Share this on WhatsAppڈاکٹر ذولفقار کاظمی بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ اسلام آباد وزیراعظم ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے