عوام کی مشکلات حل نہ کرنے اور ناقص کارکردگی پرکم جونگ اُن روپڑے

پیانگ یانگ: شمالی کوریا کے حکمراں کم جونگ اُن ورکرز پارٹی کی سالگرہ کے موقع پر فوجی پریڈ سے خطاب کے دوران عوام کی مشکلات حل کرنے میں اپنی ناکامی کا اعتراف کرتے ہوئے آبدیدہ ہوگئے۔ خبر رساں ادارے کے مطابق حکمراں جماعت ورکرز پارٹی کے یوتاسیس کی مناسبت سے ملک بھر میں خصوصی تقریبات کا انعقاد کیا جارہا ہے۔ اس حوالے سے ایک تقریب میں فوجی پریڈ سے خطاب کے دوران کم جونگ اُن عوام کا معیار زندگی بہتر نہ کرپانے کا اعتراف کرتے ہوئے رو پڑے۔شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ اُن نے کہا کہ عوام کا مجھ پر آسمان کی طرح بلند اور سمندر جتنا گہرا اعتماد ہے لیکن میں اُنہیں اطمینان بخش زندگی گزارنے کی سہولیات فراہم کرنے میں ناکام ہو گیا ہوں۔ اس موقع پر ان کی آنکھوں سے آنسو چھلک پڑے اور انہیں چشمہ اتار کر آنسو پونچھنے پڑے۔

کم جونگ اُن نے کورونا وبا کے ہنگامہ خیز دور میں ملک کی بہتر رہنمائی نہ کرپانے میں ناکامی پر بھی معافی مانگی۔ اپنے طاقتور حکمراں کو روتا دیکھ کر شمالی کوریا کے فوجی بھی آبدیدہ ہوگئے اور اپنے ملک و حکمراں کی حق میں فلک شگاف نعرے لگاتے ہوئے اپنی حمایت کا یقین دلایا۔کم جونگ اُن نے اپنے دادا اور والد کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اگرچہ مجھے ملک کی ذمہ داری سونپی گئی لیکن میری تمام کوششیں اور اخلاص عوام کو مشکلات سے نجات دلانے کے لیے کافی ثابت نہیں ہوئیں۔

شمالی کوریا کو اس وقت شدید عالمی دباؤ کا سامنا ہے، امریکی صدر کے ساتھ مذاکرات مطلوبہ نتائج نہیں دے سکے اور حریف جنوبی کوریا کی جانب ہم آہنگی کے لیے بڑھائے ہاتھ بھی خالی لوٹے ہیں جب کہ رہی سہی کسر کورونا وبا نے پوری کردی ہے، اسی لیے طاقتور حکمراں کی تقریر میں باربار ’’ سنگین چیلنجز‘‘ ’’ان گنت جدوجہد‘‘ اور ’’ہولناک آفات‘‘ کا تذکرہ رہا۔

About BBC RECORD

Check Also

’تشدد کو بڑھاوا دے کر مراعات حاصل کرنے کی کوشش، خطرناک ہے‘

Share this on WhatsAppافعانستان کے لیے امریکا کے خصوصی مندوب زلمے خلیل زاد نے متنبہ ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے