لیبیا : فائز السراج اکتوبر کے اختتام تک اقتدار سے دست بردار ہونے کے لیے تیار

لیبیا میں وفاق حکومت کی صدارتی کونسل کے سربراہ فائز السراج نے اعلان کیا ہے کہ وہ آئندہ ماہ اکتوبر کے اختتام تک اقتدار سے دست بردار ہونے اور اپنی ذمے داریاں ایگزیکٹو اتھارٹی کے حوالے کرنے کی خواہش رکھتے ہیں۔بدھ کی شام لیبیا کے عوام کے لیے کیے گئے ایک خطاب میں السراج نے اقوام متحدہ کی سرپرستی میں بحران کے دونوں فریقوں کے درمیان مشاورت اور ملاقاتوں کا خیر مقدم کیا۔ اس کا مقصد پارلیمانی اور صدارتی انتخابات کے اجرا سے قبل اداروں کو یکجا کرنا ہے۔ السراج نے ڈائیلاگ کمیٹی سے مطالبہ کیا کہ وہ نئی اتھارٹی تشکیل دینے میں جلدی کرے تا کہ اقتدار کی پرامن اور آسان منتقلی اور ملک کو بحران سے باہر لانے کو یقینی بنایا جا سکے۔

فائز السراج نے مزید کہا کہ وہ نئے وزیر اعظم کو اقتدار حوالے کرنے تک اقتدار میں رہیں گے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ ڈائیلاگ کمیٹی اکتوبر کے اختتام سے قبل اپنا مشن پورا کر لے گی۔لیبیا کے پارلیمنٹ کے ایک وفد اور لیبیا کی سپریم ریاستی کونسل نے گذشتہ ہفتے مراکش میں اس معاہدے کے حتمی مسودے پر دستخط کیے جو کچھ عرصہ قبل دونوں فریقین کے درمیان طے پایا تھا۔اس سمجھوتے میں لیبیا کی ریاست میں اعلی منصبوں پر کام کرنے والی شخصیات کے انتخاب کا طریقہ کار شامل ہے۔ اس کے علاوہ اعلی منصبوں پر بدعنوانی کے انسداد کا میکانزم بھی شامل ہے۔اس سمجھوتے پر ستمبر کے آخری ہفتے میں مراکش میں سرکاری طور پر دستخط ہوں گے۔

About BBC RECORD

Check Also

ایران کے ’’پر اسرار‘‘ ایٹمی سائنسدان تہران میں قتل کر دیے گئے

Share this on WhatsAppایران کے ایٹمی اور میزائل سازی کے سائنس دان محسن فخری زادہ ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے