انٹر نیشنل ڈارک ویب پر بچوں کے ساتھ بدفعلی کی ویڈیو چلانے والوں کو فوری گررفتار کیا جائے محمد فیصل رانا

شبیر خان سدوزئی

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ ڈیرہ غازی خان

ریجنل پولیس آفیسر محمد فیصل رانا نے کہا ہے کہ بچوں کے ساتھ بدفعلی کر کے پورنو گرافی کے لئے ان کی فحش ویڈیوز بنانے والوں کو فوری گرفتار کیا جائے پورنو گرافی ایسا مکروہ دھندہ ہے جسے انٹر نیشنل ڈارک ویب اپنے ساتھ منسلک کر لیتا ہے اس کی روک تھام۔کے لئے بچوں ۔ان کے والدین اور اساتذہ کرام۔کے ساتھ مل کر آگاہی مہم۔چلائی جائے۔ریجن کے چاروں اضلاع میں بچوں کے ساتھ بدفعلی اور اس مکروہ دھندے کی ویڈیو بنانے کے مقدمات کی تفصیلی رپورٹ میرے دفتر کو بھجوائی جائے اس معاملے میں کسی قسم کی کوتاہی قطعی ناقابل۔برداشت ہو گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے بچوں کے تحفظ کے حوالے سے بلائے گئے پولیس افسران کے خصوصی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔آر پی او فیصل رانا نے کہا کہ بچوں کو ہوس پرستوں سے اس وقت تک نہیں بچایا جا سکتا جب تک۔ہولیس افسران ہر بچے کو اپنا بچہ اور بیٹا نہ سمجھیں ۔ریجن کے چاروں اضلاع میں ہر بچہ میرا بیٹا کی پالیسی نافز کی جا رہی ہے ۔۔بچوں کے ساتھ بدفعلی کرنے اور پھر اس کی ویڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر ڈال کر انہیں بلیک میل کرنے والے بیلک میلرز کھلے عام قانون کو چیلنج کرتے ہیں ایسے ملزمان کسی بھی رعائت کے مستحق نہیں ہوتے ان ملزمان کے خلاف قانون کے مطابق بھر پور کارروائی ہونی چاہیے۔

فیصل رانا نے کہا کہ بچوں کے اغوا ان سے۔بدفعلی اور پھر بدفعلی کو پورنو گرافی تک جانے کے تمام۔اقدامات اور قانون شکنجوں کو ہمیں قانون کی طاقت سے روکنا ہے ۔بچوں کوقانون شکنوں کے ہر قسم۔کے تشدد سے بچانے کے لئے ہمیں جہاں پر ملزمان کی گرفتاری۔مقدمات کے اندراج سمیت ہر قانونی اقدام۔اٹھانا ہے وہاں پر ہمیں اس مکروہ دھندے کے۔خلاف آگاہی مہم۔کوبھی چلانا ہے ۔اس سلسلہ میں پولیس افسران بچوں نے والدین ۔اساتذہ سے مل کر بھر پور آگاہی مہم۔چلائیں۔ار پی او نے کہا کہ بچوں کے ساتھ کسی قسم کے تشدد کے بعد ملزمان کی گھنٹوں میں گرفتاری لازمی قرار دے دی گئی ہے۔۔ملزمان کی گرفتاری کے بعد تفتیشی افسران ڈی این اے ٹیسٹ سمیت ایسے ٹھوس شواہد کے ساتھ ملزمان کو۔چالان کریں جس سے عدالت انہیں قانون کے مطابق ایسی سزا دے جو معاشرے کے لئے عبرتناک ہو تاکہ اس کے بعد کسی کو ہمارے ۔بچوں کے ساتھ اس طرح کی انسانیت سوزی کی ہمت نہ ہو سکے ۔۔انہوں نے ہدائت کی کہ اس نوعیت کے مقدمات کی پراگریس سے انہیں روانہ کی بنیاد پر آگاہ رکھا جائے

About BBC RECORD

Check Also

حاملہ خاتون کی ہلاکت4ملزمان کے خلاف قتل کا مقدمہ درج آر پی او

Share this on WhatsAppشبیر خان سدوزئی بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ ڈیرہ غازی خان ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے