یمن : دوران تنصیب دھماکا خیز مواد پھٹنے سے حوثی عناصر موت کا شکار

یمن کے صوبے الحدیدہ کے جنوبی علاقے میں دھماکا خیز مواد دوران تنصیب پھٹ جانے سے حوثی ملیشیا کے ارکان ہلاک ہو گئے۔ یہ واقعہ پیر کے روز حیس ضلع کے علاقے الحمینیہ میں پیش آیا۔

یمنی مشترکہ فورسز کے ملٹری میڈیا کے مطابق حوثی ملیشیا کے عناصر الحمینیہ کی ایک سڑک پر دھماکا خیز مواد نصب کر رہے تھے کہ اس دوران وہ پھٹ گیا۔ اس کے نتیجے میں ان میں سے کم از کم دو افراد موقع پر ہلاک ہو گئے۔ اس موقع پر حوثی عناصر نے دھماکے کے مقام پر پہنچنے کی کوشش کی تا کہ دھماکا خیز مواد نصب کرنے والوں کی مدد کی جا سکے تاہم علاقے میں موجود عمالقہ فورس کے بریگیڈ 11 نے ان کو روک دیا۔ اس دوران جھڑپ میں متعدد حوثی زخمی ہو گئے۔

اس سے قبل التحیتا ضلع کے مشرق میں مشترکہ فورسز کی کارروائی میں حوثی ملیشیا کے پانچ ارکان مارے گئے۔ یہ افراد اقوام متحدہ کی جانب سے اعلان کردہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی کوشش کر رہے تھے۔

ادھر حوثی ملیشیا نے التحیتا ضلع میں پہاڑی علاقوں کے دیہات کو آتشی ہتھیاروں کے ذریعے اندھا دھند فائرنگ کا نشانہ بنایا۔ مقامی ذرائع کے مطابق رہائشی دیہات اور کھیتوں پر 12.7 اور 14.5 ملی میٹر کی نالی کے ہتھیاروں سے فائرنگ کی گئی۔

اس دوران حوثی ملیشیا کے نشانچیوں نے راستوں پر چلنے والے پیدل افراد کو بھی نشانہ بنایا۔ اس کے سبب شہریوں میں خوف و دہشت پھیل گئی۔سال 2018ء میں الحدیدہ صوبے میں اقوام متحدہ کی جانب سے اعلان کردہ جنگ بندی کے بعد سے حوثی ملیشیا نے شہریوں کے خلاف انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔ اب تک ہزاروں افراد ان کارروائیوں کا شکار بن چکے ہیں۔

About BBC RECORD

Check Also

امریکی قانون سازوں کا ٹرمپ سے سعودی عرب میں جی 20 اجلاس کے بائیکاٹ کا مطالبہ

Share this on WhatsAppرابرٹ ولیم بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ واشنگٹن امریکی قانون سازوں ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے