امریکا کے مطالبے پر اپنے بیلسٹک اور جوہری پروگرام ہرگز نہیں روکیں گے: خامنہ ای

ایرانی رہبر اعلی علی خامنہ ای کا کہنا ہے کہ ایران پر پابندیوں اور انتہائی دباؤ کا راستہ اپنا کر امریکا کا اپنے مقاصد کی تکمیل کا خواب کبھی پورا نہیں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ امریکی پابندیوں کا مقصد ایرانی معیشت کو زمین بوس کرنا ہے۔ خامنہ ای نے زور دے کر کہا کہ تہران امریکا کے مطالبے کے مطابق اپنا بیلسٹک میزائل اور جوہری پروگرام ہر گز نہیں روکے گا۔

جمعے کے روز جاری بیان میں ایرانی رہبر اعلی نے کہا کہ واشنگٹن کی جانب سے جنرل قاسم سلیمانی کے قتل نے ایرانیوں اور عراقیوں کے بیچ یک جہتی کو گہرا بنانے میں کردار ادا کیا۔ ایران ہر گز امریکا کے ساتھ مذاکرات نہیں کرے گا جو تہران کے علاقائی نفوذ کو محدود کرنے اور ایران کے آگے بڑھنے پر روک لگانے کی کوششوں میں ہے۔یاد رہے کہ ایرانی پاسداران انقلاب کی القدس فورس کا سربراہ قاسم سلیمانی رواں سال جنوری میں بغداد کے ہوائی اڈے کے نزدیک امریکی فضائی حملے میں مارا گیا تھا۔خامنہ ای نے ایرانی جوہری معاہدہ بچانے میں ناکامی پر یورپی قوتوں کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ "یورپی طاقتوں نے کھوکھلے وعدوں کے ذریعے ایران کی معیشت پر کاری ضرب لگائی”خامنہ ای نے تمام ایرانیوں پر زور دیا کہ وہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے خلاف معرکے میں صف بستہ ہو جائیں۔

ایرانی رہبر اعلی نے زور دیا کہ ملک کو تیل کی برآمدات پر انحصار نہیں کرنا چاہیے۔واضح رہے کہ امریکی محکمہ خارجہ نے جمعرات کی شام ایران میں معدنیات اور تعمیرات کے شعبوں پر عائد پابندیوں میں توسیع کا اعلان کیا۔امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پابندیوں میں توسیع میں ایران کے جوہری ، میزائل اور فوجی پروگراموں سے متعلق 22 آرٹیکلز شامل ہیں۔ پومپیو نے یاد دہانی کرائی کہ ایران کے جوہری ، میزائل اور فوجی پروگراموں سے بین الاقوامی امن و سلامتی کو شدید خطرہ لاحق ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

امریکی قانون سازوں کا ٹرمپ سے سعودی عرب میں جی 20 اجلاس کے بائیکاٹ کا مطالبہ

Share this on WhatsAppرابرٹ ولیم بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ واشنگٹن امریکی قانون سازوں ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے