کلبھوشن بھارتی سفارتکاروں کو پکارتا رہا لیکن انہوں نے ایک نہ سنی، شاہ محمود قریشی

بندیا اسحاق
بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ لاہور

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ جب سفارتکاروں کو کلبھوشن سے بات ہی نہیں کرنا تھی تو رسائی کیوں مانگی، بھارتی سفارتکاروں کو درمیان میں شیشے پر اعتراض تھا، وہ بھی ہٹا دیا، سفارتکاروں نے آڈیو ویڈیو ریکارڈ پر اعترض کیا، وہ بھی نہیں کی، بھارتی سفارتکاروں کی تمام باتیں تسلیم کی گئیں۔

وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ کلبھوشن بار بار سفارت کاروں کو پکارتا رہا، لیکن انہوں نے اس کی ایک نہ سنی۔ تفصیلات کے مطابق مخدوم شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ قونصلر رسائی کی ضرورت کے مطابق تمام اقدامات کیے گئے، بھارتی سفارتکاروں نے کلبھوشن تک رسائی کے بجائے راہ فرار اختیار کی۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آج بھارت کے 2 سفارت کاروں کو قونصلر رسائی دی گئی، جو بات طے ہوئی تھی، اس کے تحت قونصلر رسائی دی گئی، تاہم اس موقعے پر بھی بھارت کی بدنیتی سامنے آگئی۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی سفارتکار قونصلر رسائی چاہتے ہی نہیں تھے۔ کلبھوشن اپنے ملک کے سفارتکاروں کو پکارتا رہا اور وہ چلے گئے، وہ کہتا رہا مجھ سے بات کریں، لیکن بھارتی سفارتی نمائندوں نے کوئی جواب تک نہیں دیا، ان کا رویہ حیران کن تھا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ جب سفارت کاروں کو کلبھوشن سے بات ہی نہیں کرنا تھی تو رسائی کیوں مانگی، بھارتی سفارت کاروں کو درمیان میں شیشے پر اعتراض تھا وہ بھی ہٹا دیا، سفارتکاروں نے آڈیو ویڈیو ریکارڈ پر اعترض کیا وہ بھی نہیں کی، بھارتی سفارت کاروں کی تمام باتیں تسلیم کی گئیں لیکن پھر بھی وہ اپنے ہم وطن سے بات کیے بغیر ہی چلے گئے۔

About BBC RECORD

Check Also

ایف اے ٹی ایف پر پاکستان کے خلاف سعودی ووٹ پروپیگنڈہ ہے: دفتر خارجہ

Share this on WhatsAppپاکستان نے فائنینشل ایکشن ٹاسک فورس ’’ایف اے ٹی ایف‘‘ کے حوالے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے