محکمہ داخلہ نے سوشل میڈیا پر فرقہ وارانہ مواد کا نوٹس لے لیا

شبیر خان سدوزئی
بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ لاہور

محکمہ داخلہ کی جانب سے وفاقی حکومت کو بھجوائے گئے مراسلہ میں کہا گیا ہے کہ سوشل میڈیا پر تمام نفرت انگیز اور فرقہ وارانہ مواد ہٹا دیا جائے۔ محکمہ داخلہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ سوشل میڈیا کا پلیٹ فارم فرقہ واریت کو فروغ دینے کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے،

جس کا سدباب انتہائی ضروری ہے۔محکمہ داخلہ نے وفاقی حکومت کو سوشل میڈیا پر موجود تمام نفرت انگیز اور فرقہ وارانہ مواد ہٹانے کیلئے مراسلہ بھجوا دیا ہے۔ محکمہ داخلہ کی جانب سے وفاقی حکومت کو بھجوائے گئے مراسلہ میں کہا گیا ہے کہ سوشل میڈیا پر تمام نفرت انگیز اور فرقہ وارانہ مواد ہٹا دیا جائے۔ محکمہ داخلہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ سوشل میڈیا کا پلیٹ فارم فرقہ واریت کو فروغ دینے کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے،

جس کا سدباب انتہائی ضروری ہے۔ محکمہ داخلہ نے نشاندہی کی ہے کہ شرپسند عناصر سوشل میڈیا کے ذریعے مقدسات کی توہین کرتے ہیں اور مخالف فرقے کے جذبات مجروح کرتے ہیں۔ ایسے عناصر کی سرکوبی اور ان کی جانب سے اپ لوڈ کیا گیا متنازع مواد ہٹا دیا جائے۔

دوسری جانب محکمہ داخلہ نے تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز اور ڈی پی اوز کو خط لکھا ہے جس میں ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنے اپنے اضلاع میں امن کمیٹیوں کو فعال کریں اور عیدالاضحیٰ کے حوالے سے سکیورٹی پلان تیار کرکے محکمہ داخلہ کو بھجوائیں۔ محکمہ داخلہ کی جانب سے ہدایت کی گئی ہے کہ عید کی نماز کی جگہ پر کورونا ایس او پیز کے تحت انتظامات کروائے جائیں اور شہریوں کو پابند کیا جائے کہ وہ سماجی فاصلے کو قائم رکھتے ہوئے نماز عید ادا کریں۔

About BBC RECORD

Check Also

لیگی قیادت نے اشتعال انگیزی کے لئے 10 لاکھ روپے تقسیم کیے، پنجاب حکومت

Share this on WhatsAppبندیا اسحاق بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز ؛ لاہور وزیراطلاعات پنجاب ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے