ایران نے بھارت کو چاہ بہار ریل منصوبے سے الگ کر دیا ہے

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ نئی دہلی

خطے میں پڑوسی ممالک کے ساتھ مسائل پیدا کرنے والے ملک بھارت کو بڑا دھچکا لگا ہے، ایران نے بھارت کو چاہ بہار ریل پراجیکٹ سے الگ کر دیا۔ ایران نے بھارت کو چاہ بہار ریل منصوبے سے الگ کر دیا ہے، بھارت کی جانب سے فنڈز کی تاخیر کے باعث ایران کو یہ قدم اٹھانا پڑا، بھارت کو پراجیکٹ سے جدا کرنے کے بعد ایرانی حکومت نے اپنے طور پر ریل لائن کی تعمیر کا فیصلہ کر لیا ہے۔

ایران اب چاہ بہار ریلوے لائن کو بھارت کے بغیر مکمل کرے گا، بھارت اور ایران کے درمیان یہ معاہدہ 4 سال پہلے طے پایا تھا، منصوبے کے تحت افغان سرحد پر چاہ بہار سے زاہدان تک ریلوے لائن تعمیر ہونی تھی، تاہم بھارت کی جانب سے پروجیکٹ پر کام شروع کرنے اور فنڈز کی فراہمی میں مسلسل تاخیر ہوتی رہی۔ایرانی حکام نے بھارتی میڈیا کو بتایا کہ یہ پراجیکٹ مارچ 2022 تک مکمل ہوگا، اب ایران اس ریلوے لائن کو بھارت کے بغیر مکمل کرے گا۔

ادھر بھارت میں ایران کے فیصلے کے بعد کانگریس رہنما انتہا پسند مودی سرکار پر برس پڑے ہیں، کانگریس رہنما ابھیشیک سنگھوی نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ایران نے بھارت کو منصوبے سے الگ کیا، یہ ہے مودی کی ڈپلومیسی ؟ یہ بھارت کے لیے بڑا نقصان ہے۔واضح رہے کہ بھارت خطے میں تنہائی کا شکار ہو رہا ہے، پاکستان کے ساتھ لائن آف کنٹرول پر معاہدے کی مسلسل خلاف ورزی سمیت، چین اور دیگر ہمسایہ ممالک کے ساتھ سرحدی تنازعات پر نئی دہلی کی پریشانیوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

امریکی قانون سازوں کا ٹرمپ سے سعودی عرب میں جی 20 اجلاس کے بائیکاٹ کا مطالبہ

Share this on WhatsAppرابرٹ ولیم بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ واشنگٹن امریکی قانون سازوں ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے