کورونا؛ الال میں ایک ہی خاندان کے 16افرادجنوبی کینرا میں 49اور اڈپی میں 14نئے کیس

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ انڈیا
منگلورو؛ محکمہ صحت کی جانب سے جاری کیے گئے اعداد وشمار کے مطابق جنوبی کینرا اور اڈپی ضلع میں کورونا کا قہر تھمتا نظر نہیں آرہا ہے۔ کل 27جون کی شام کو ملنے والی رپورٹ سے پتہ چلتا ہے کہ جنوبی کینرا میں کل49اور اڈپی ضلع میں 14نئے معاملے سامنے آئے ہیں۔

معلوم ہوا ہے الال کے ماستی کٹّے میں واقع آزاد نگر علاقے میں ایک ہی خاندان کے 16افراد کی کووِڈ جانچ رپورٹ پوزیٹیو آئی ہے۔ دو دن پہلے آزاد نگر کی جو خاتون کووِڈ کی وجہ سے فوت ہوئی تھیں ان کے پڑوس میں رہنے والے اس گھر کے تمام افراد مرض کاشکار ہوئے ہیں۔ صرف ان کے خاندان کے دو افراد بیرون ملک میں رہنے کی وجہ سے بیمارہونے سے بچ گئے ہیں۔پوزیٹیو نکلنے والے 16افراد میں 4بچوں سمیت 7مرد اور9خواتین ہیں۔الال میں اپنا زور دکھاتی ہوئی اس وباء کے پس منظر میں جن علاقوں کومکمل سیل ڈاؤن کیا گیا ہے اس میں الال پولیس اسٹیشن، آزاد نگر، کوڈی، پولیس کوارٹرس، زرین نگر وغیرہ شامل ہیں۔

جنوبی کینرا میں آج کل جو پوزیٹیو رپورٹس آرہی ہے اس میں اکثر65 سال سے عمر کے افراد شامل ہیں۔اب تک یہاں متاثرین کی تعداد 576ہوگئی ہے جن میں 10بیرون ضلع کے افراد ہیں۔کل جن لوگوں کی رپورٹ پوزیٹیو آئی ہے ان میں 14افراد سعودی عربیہ، عرب امارات اور قطر وغیرہ سے لوٹے ہوئے ہیں۔

بیلتنگڈی میں پٹرول بنک پر کام کرنے والی ایک لڑکی کی جانچ کی گئی تو اس کے اندر کووِڈ پوزیٹیو نکلا۔ محکمہ صحت کی طرف سے عوام میں سے چند لوگوں کی سرسری طور پر جانچ (ریانڈم ٹیسٹ) کرنے کی جو مہم چلائی ہے اس کے دوران یہ معاملہ سامنے آیا ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ اس مہم کے تحت جملہ 40افراد کے گلے سے تھوک کا نمونہ جانچ کے لئے بھیجا گیا تھا اس میں سے صرف اس لڑکی کی رپورٹ پوزیٹیو آئی ہے، لیکن اس کے اندر تاحال مرض کی کوئی علامت موجود نہیں ہے۔ اس کو آئسولیشن کے لئے منگلورو اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔ساتھ ہی ساتھ پٹرول بنک، لڑکی کے گھر اور اس کے اطراف کے علاقے کو سیل ڈاؤن اور لڑکی کے ابتدائی رابطے میں آنے والوں کو کوارنٹین کیا گیا ہے۔اس لڑکی کو مرض کس ذریعے سے لاحق ہوا اس کے بارے میں جانکاری حاصل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ شبہ کیا جارہا ہے کہ اب یہ مرض عوامی سطح پر (کمیونٹی اسپریڈ) پھیلتا جارہا ہے۔اس وجہ سے عام مقامات اور بازاروں میں لوگوں کی چہل پہل میں کمی آرہی ہے۔

جنوبی کینرا کی ڈپٹی کمشنر سندھو نے بتایا کہ ضلع میں اس وقت 100مقامات کو کوارنٹین زون میں تبدیل کردیا گیا ہے۔تین مرد اورایک خاتون اس وقت سیریس حالت میں آئی سی یو میں زیرعلاج ہیں۔ انہوں نے اپیل کی ہے کہ کوارنٹین زون قرار دئے گئے علاقوں میں بسنے والے لوگ سرکاری قوانین کی پوری طرح پابندی کریں۔سرکاری افسران جائزہ لینے کے لئے ان علاقوں کا مسلسل دورہ کرتے رہیں گے اس کے لئے عوام کو بھرپور تعاون کرنا ہوگا۔اوربھیڑ بھاڑ سے پرہیز کرنا ہوگا۔ اس کے علاوہ کوارنٹین کیے گئے لوگوں کو خود اپنے گھر میں بھی دوسرے لوگوں کے ساتھ مناسب فاصلہ بناکر رہنا ہوگا۔ا ن لوگوں پر ’کوارنٹین واچ‘ ایپ کے ذریعے نگاہ رکھی جائے گی۔ڈی سی نے مزید بتایا کہ اب تک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے 54افراد پر سخت کارروائی کے لئے معاملات درج کیے گئے ہیں۔

جہا ں تک اڈپی ضلع کے معاملہ ہے، وہاں پر 27تاریخ کو 14نئے پوزیٹیو کیس سامنے آئے، جن میں ایک بچے کے ساتھ 7مرد اور 7خواتین ہیں۔ ان میں سے 5مہاراشٹرا،ایک تلنگانہ، ایک بنگلورو اور ایک کمٹہ سے سفر کرکے لوٹنے والے ہیں۔ جبکہ 6افرادنے ضلع کے اندر ہی دوسرے لوگوں سے رابطے کے بعد اس مرض کا شکار ہوئے ہیں۔جملہ 75مریضوں کو آئسولیشن میں رکھا گیا ہے۔ سنیچر کے دن 18نئے مریضوں کو اسپتال میں داخل کیا گیا اور12لوگوں کوصحت یابی کے بعد اسپتال سے ڈسچارج کردیا گیا۔ضلع میں فی الحال 90مریض ایکٹیوہیں۔

About BBC RECORD

Check Also

یمن کی آئینی حکومت اور حوثی باغیوں کے درمیان قیدیوں کے تبادلے کا معاہدہ طے پا گیا

Share this on WhatsAppیمن میں آئینی حکومت اور حوثی باغیوں کے درمیان قیدیوں کے تبادلے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے