لیبیا کے الجفرہ اور سرت پرقبضے کی کوشش کررہے ہیں:ایردوآن

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے کہا ہے کہ ہم لیبیا کے دو اہم شہروں سرت اور الجفرہ کو لیبیا کی قومی فوج سے واپس لینے کی جنگ لڑ رہے ہیں۔

"ٹی آر ٹی” عربی کو انٹرویو دیتے ہوئے ترک صدر رجب طیب ایردوآن نے کہا ہمارا ہدف سرت اور الجفرہ شہروں کا کنٹرول حاصل کرنا اور ان شہروں کو قومی وفاق حکومت کی عمل داری میں لانا ہے۔

لیبیا میں جنگ بندی کے حوالے سے برلن ٹریک معاہدے پر دستخط کے باوجود لیبیا کے مسئلے میں مداخلت کرنے والےترک صدر نے مزید کہا کہ ترکی کی کا طرابلس کی قومی وفاق حکومت کے ساتھ معاہدہ ہے اور ہم اس معاہدے کی پاس داری کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ بحیرہ روم کی سرحدیں واضح ہیں۔

ترک صدر نے کہا کہ ان کا ملک بحیرہ روم اور بحیرہ اسود میں تیل کے ذخائر کی تلاش میں مصروف ہے۔

ادھر دوسری طرف ترکی کی نیشنل آرمی کے ترجمان میجر جنرل احمد المسماری نے پیر کے روز کہا ہے کہ ترکی کی حمایت یافتہ ملیشیا نے شہریوں کے خلاف جنگی جرائم کا ارتکاب کیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ترکی لیبیا کی خودمختاری کی خلاف ورزی کے لیے نیٹو میں اپنی رکنیت استعمال کررہا ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

امریکی قانون سازوں کا ٹرمپ سے سعودی عرب میں جی 20 اجلاس کے بائیکاٹ کا مطالبہ

Share this on WhatsAppرابرٹ ولیم بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ واشنگٹن امریکی قانون سازوں ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے