پشاور: کئی ماہ گزرنے کے باوجود انسانی حقوق کے کارکن ادریس خٹک بدستور لاپتا

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ پشاور
خیبر پختونخوا میں انسانی حقوق کے تحفظ کے لیے متحرک اور نیشنل پارٹی (این پی) کے سیکریٹری جنرل ادریس خٹک کو 13 نومبر 2019 کو نامعلوم افراد نے اغوا کیا تھا تاہم انہیں تاحال بازیاب نہیں کیا جا سکا ہے۔ادریس خٹک کی بیٹی طالیہ خٹک نے ایک ویڈیو پیغام میں وزیر اعظم عمران خان اور انسانی حقوق کی وفاقی وزیر ڈاکٹر شیریں مزاری سے والد کی بازیابی میں مدد کی اپیل کی ہے۔ عید سے کچھ دن قبل جاری ہونے والی ویڈیو میں طالیہ خٹک نے کہا کہ ان کے والد ذیابیطس کے مریض ہیں جب کہ انہیں روزانہ کی بنیاد پر دوا کی ضرورت ہوتی ہے۔

ضلع نوشہرہ کے قصبے سیدو سے تعلق رکھنے والے ادریس خٹک گزشتہ سال 13 نومبر کو اس وقت پر اسرار طور پر غائب ہوگئے تھے جب وہ اسلام آباد سے واپس خیبر پختونخوا آ رہے تھے۔ادریس خٹک کے قریبی ساتھی قیصر خان نے بتایا کہ جب وہ صوابی انٹر چینج پہنچے تو سادہ لباس افراد ادریس خٹک کو ڈرائیور شاہ سوار سمیت لے گئے۔ بعد ازاں ان کے ڈرائیور کو اسلام آباد ٹول پلازہ پر چھوڑ دیا گیا اور اُنہیں گاڑی دے کر گھر جانے کا کہا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ڈرائیور شاہ سوار کی واپسی کے بعد صوابی کے قصبے چھوٹا لاہور پولیس تھانے میں مقدمہ درج کرنے کے لیے رجوع کیا گیا مگر پولیس نے مقدمہ درج نہیں۔ تاہم عدالتی حکم پر صوابی پولیس نے مقدمہ درج کر لیا۔قیصر خان نے بتایا کہ ادریس خٹک کے غائب ہونے کے بعد انہوں نے پشاور ہائی کورٹ میں سینئر وکیل لطیف آفریدی کے ذریعے ایک درخواست دائر کی ہے۔ عدالت نے وفاقی حکومت کے سات مختلف اداروں سے جواب طلب کیا ہے مگر ابھی تک صرف دو اداروں نے پشاور ہائی کورٹ میں جواب جمع کرایا ہے۔

مختلف ذرائع سے سامنے آنے والی معلومات کے مطابق 13 نومبر 2019 کو غائب ہونے کے بعد رات 11 بجے ادریس خٹک نے اپنے ہی موبائل فون کے ذریعے بیٹیوں شمائلہ خٹک اور طالیہ خٹک سے رابطہ کیا تھا۔ انہوں نے بیٹیوں سے کہا تھا کہ ان کے پاس موبائل فون کا چارجر نہیں ہے لہذا آئندہ چند دن تک ان کا فون بند رہے گا۔ جب کہ 14 نومبر کو ادریس خٹک نے ایک دوست کو فون کرکے لیپ ٹاپ اور ہارڈ ڈسک بھیجنے کا کہا تھا۔

About BBC RECORD

Check Also

وزیراعلیٰ پنجاب کی زیر صدارت اجلاس، اعلیٰ تعلیم کے فروغ کیلئے اقدامات کا جائزہ

Share this on WhatsAppشبیر خان سدوزئی بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ لاہور وزیراعلیٰ پنجاب ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے