وزیراعلیٰ پنجاب کا دورہ ڈی جی خان اربوں روپے کے منصوبوں کا سنگ بنیاد رکھ دیا گیا

شبیر خان سدوزئی
بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ لاہور
وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ 200بستروں پر مشتمل کارڈیالوجی انسٹی ٹیوٹ پر مجموعی طور پر 4ارب 28کروڑ روپے لاگت آئے گی-سردار فتح محمد خان بزدار انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کا پہلا فیز 3 ارب روپے کی لاگت سے مکمل ہوگا۔پہلے فیز میں 44کنال اراضی پر 8میڈیکل شعبے، کیفے ٹیریا، مسجداور سٹور بنائے جائیں گے -پہلے مرحلے میں 100بستروں پر مشتمل ہسپتال کو فنکشنل کیاجائے گا-سردار فتح محمد خان بزدار انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کا پہلا فیز 2سال میں مکمل کیا جائے گا-سردار فتح محمد خان بزدار انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے قیام سے چاروں صوبوں کے ہزاروں مریض مستفید ہوں گے۔آج عوام کا دیرینہ مطالبہ پورا ہواہے اور میں سمجھتا ہوں کہ کارڈیالوجی انسٹی ٹیوٹ کو ڈیرہ غازی خان میں برسوں پہلے بننا چاہیے تھا۔انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی بننے سے پنجاب،سندھ،بلوچستان اورخیبر پختونخوا کے مریض بھی علاج کراسکیں گے۔

ایس ایف ایم کے بی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے قیام سے لاہوراورملتان کے ہسپتالوں میں امراض قلب کے مریضوں کا رش کم ہوگا۔انہوں نے کہاکہ ایس ایف ایم کے بی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی جنوبی پنجاب کے محروم عوام کیلئے پاکستان تحریک انصاف کا تحفہ ہے۔ماضی کی محرومیوں کا ازالہ کرنے کیلئے صحت اورتعلیم کے منصوبوں کو ترجیحی بنیادوں پر مکمل کروائیں گے۔ انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے پراجیکٹس کو ریکارڈ مدت میں مکمل کیا جائے گا۔ ایس ایف ایم کے بی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں مستند معا لجین،جدید ترین طبی آلات اورمشینیں فراہم کریں گے۔دل کے مرض میں مبتلا کسی مریض کو علاج کیلئے لاہور یا ملتان نہیں جانا پڑے گا۔انہوں نے کہاکہ ڈیرہ غازی خان میں کارڈیالوجی انسٹی ٹیوٹ کا قیام میرے والد سردار فتح محمد خان کا خواب تھا،آج تعبیر دیکھ رہا ہوں۔ڈیرہ غازی خان سمیت تمام پسماندہ اضلاع کے لوگوں کی آواز ہوں۔پسماندہ اوردوردراز علاقوں کے تعلیم و صحت کے ترقیاتی منصوبے اپنی نگرانی میں مکمل کر ا رہا ہوں۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے منصوبے پر گہری دلچسپی کا اظہار کیا-


ماڈرن انٹرسٹی بس ٹرمینل ڈیرہ غازی خان ہی نہیں بلکہ دیگر شہروں کے مسافر بھی مستفید ہوں گے۔ماڈرن انٹرسٹی ٹرمینل بننے سے ٹریفک میں رکاوٹ کا 15سالہ مسئلہ حل ہو گا۔ ڈیرہ غازی خان کے بس ٹرمینل میں مسافروں کے لئے جدید ترین عمارت بنائی جائے گی۔بس ٹرمینل میں دکانیں،ورکشاپس،چھوٹی ورکشاپس،پولیس پوسٹ اوربسوں کیلئے شیڈ بھی بنائے جائیں گے۔ جدید ترین فائر الارم سسٹم بھی نصب کیا جائے گا۔بس ٹرمینل کی سیکورٹی اورمسافروں کی نگرانی کیلئے سی سی ٹی وی کیمرے بھی نصب کیے جائیں گے۔ بس ٹرمینل میں مسافروں کی سہولت کیلئے سائن بورڈاورساؤنڈ سسٹم بھی لگائے جائیں گے۔ کمشنرڈیرہ غازی خان ڈویژن نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو منصوبے کے اہم خدوخال کے بارے میں بریفنگ دی گئی- وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے قدیمی پل ڈاٹ /سنگم چوک کی تعمیر وتوسیع اور بیوٹیفکیشن کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب میں بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ تقریباً ڈیڑھ کلومیٹر طویل پل ڈاٹ /سنگم چوک کی کشادگی سے مقامی اوردوسرے شہروں سے آنیوالے لاکھوں شہری مستفید ہوں گے اوراس منصوبے کی بیوٹیفکیشن اورتعمیر و توسیع سے ڈیرہ غازی میں ٹریفک کے اژدہام کا 10سالہ دیرینہ مسئلہ حل ہوگا۔پل ڈاٹ /سنگم چوک کی تعمیرو توسیع کے منصوبے سے سندھ اوربلوچستان کی ٹریفک کی آمدو رفت میں آسانی ہوگی۔مسافروں کو ٹریفک کے بہاؤ میں روانی آنے سے دقت کا سامنا نہیں کرنا پڑے گااوراس منصوبے کو ایک سال کی مدت میں مکمل کیا جائے گا۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدارکمشنر آفس ڈیرہ غازی خان پہنچے تو کمشنرساجد ظفر نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کاخیر مقدم کیا-وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کمشنر آفس میں ڈیرہ غازی خان کیلئے میگاپراجیکٹس کی تختیوں کی نقاب کشائی کی اور زرخیز زمینوں کو دریائے سندھ کے کٹاؤسے بچانے کیلئے تین سپر سٹرکچر بندکے منصوبے کاآغاز کیا-وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہاکہ سپرسٹرکچر بند بننے سے موضع بیت عالم،کوٹ والا،چک رامن،گجانی اوردیگرمتعدد آبادیاں سیلاب کی تباہ کاریوں سے محفوظ رہے گی۔دریائے سندھ کے دائیں کنارے پر سپرسٹرکچر بننے سے انسانی جانوں،لائیوسٹاک اورفصلوں کوسیلابی پانی سے محفوظ رکھا جاسکے گا۔2010کے سیلاب کے بعد دریائے سندھ کے دائیں کنارے پر سیلابی پانی کے کٹاؤکے باعث ملحقہ بستیاں ہمہ وقت خطرے کا سامنا کررہی تھیں۔سپر سٹرکچر بند بننے سے ملحقہ نہروں کے ٹوٹنے کاخطرہ بھی کم ہوگا۔ ایریگیشن ماہرین کی سفارشات پر گجانی اسکیپ کے ساتھ”انورٹڈ ہاکی ٹائپ بند“ بنایا جائے گا۔بیت عالم روڈ اورکوٹ والا روڈ کے ساتھ جے ہیڈ ٹائپ سپر بنائے جائیں گے۔کمشنر ڈی جی خان اورچیف انجینئرنگ ایریگیشن نے وزیراعلیٰ کو پراجیکٹ کی جزئیات سے آگاہ کیا-


وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے ڈیرہ غازی خان میں 100بستروں کے سوشل سکیورٹی ہسپتال کے منصوبے کا بھی آغازکیا۔وزیراعلیٰ نے ڈیرہ غازی خان ٹیچنگ ہسپتال میں کورونا ٹیسٹ کیلئے بی ایس ایل تھری لیب پراجیکٹ کا افتتاح کیا-بی ایس ایل تھری لیب میں بائیو سیفٹی کیبنٹ، آئی واش سٹیشن، ٹی آر ایس مشین، ڈیڈ ائیر باکس، مائیکرو اینڈ ریفریجریٹر سینٹری فیوج اور دیگر جدید طبی آلات میسر ہوں گے-وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے تحصیل کوہ سلیمان اورتونسہ کی بستیوں میں بجلی کی فراہمی کیلئے میپکو کو 26کروڑ 70لاکھ روپے کا چیک دیا-وزیراعلیٰ نے چیف ایگزیکٹو آفیسر میپکو کو ڈیرہ غازی خان کے کمشنر آفس میں حکومت پنجاب کی طرف سے چیک دیا اور کہاکہ تمن بزدار،تمن قیصرانی،تمن کھوسہ،تمن لغاری سمیت دیگر بستیوں میں بھی بجلی فراہم کی جائے گی-کوہ سلیمان کی پہاڑیوں میں تاریکی کا خاتمہ ہوگااورترقی کے روشن سفر کا آغاز ہوگا-جدید دور میں صدیوں سے بجلی سے محروم قبائلیوں کے گھرپہلی بار روشن ہوں گے-بجلی جیسی بنیادی سہولت سے قبائلیوں کا طرز زندگی تبدیل ہوجائے گا۔تحصیل کوہ سلیمان اورتونسہ میں الیکٹرک سٹی پراجیکٹس سے ہزاروں شہری مستفیدہوں گے۔کوہ سلیمان میں بجلی کی روشنی آگئی،علم کے دیئے بھی جلائیں گے۔چراغ جلاتے رہیں گے اورمحروم عوام کی زندگی میں تبدیلیاں لاتے رہیں گے۔

وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے جناح فیملی پارک کی بحالی کے منصوبے کا سنگ بنیا درکھا -وزیراعلیٰ نے ڈیرہ غازی خان میں لنگر خانے کے منصوبے کا بھی باقاعدہ آغاز کیا -وزیراعلیٰ نے کشمیر پارک کی بحالی اور تعمیرنو کے منصوبے کا سنگ بنیاد بھی رکھا -وزیر مملکت زرتاج گل، صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان، مشیر حنیف پتافی،اراکین اسمبلی،سابق رکن اسمبلی مینا لغاری، ایڈیشنل چیف سیکرٹری اربنائزیشن طاہر خورشید، سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن،سی ای اوانفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ اتھارٹی پنجاب،کمشنر ڈیرہ غازی خان ڈویژن،آر پی او اورمتعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے –

وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے عوامی نمائندگان کی تجاویز اورسفارشات کو غور سے سنا اور عوام کے مسائل کے حل کیلئے منتخب نمائندؤں کی سفارشات اورتجاویز پر عملدر آمد کی یقین دہانی کرائی-وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے انتظامی افسران کو عوامی مسائل کے حل کیلئے فوری اقدامات کی ہدایت کی-بعدازاں وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کمشنر آفس ڈیرہ غازی خان میں خصوصی اجلاس کی صدارت کی – پاک ڈبلیوڈی اوراین ایچ اے حکام نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو ڈیرہ غازی خان ڈویژن کی شاہرات کی تعمیرو مرمت کے پراجیکٹس پر تفصیلی بریفنگ دی- وزیراعلیٰ عثمان بزدار کوڈویلپمنٹ پراجیکٹس پر پیش رفت سے آگاہ کیاگیا-وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے پاک ڈبلیوڈی اوراین ایچ اے حکام کوڈیرہ غازی خان میں زیر تکمیل ترقیاتی منصوبے جلد مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ رمک تا کشمور این 55انڈس ہائی وے کی تعمیر ومرمت کی 6سکیمیں جلد ازجلد مکمل کی جائیں -تونسہ تاٹبی قیصرانی انڈس ہائی وے کی تعمیر و مرمت ترجیحی بنیادوں پرمکمل کی جائے -وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ سٹیل برج تک اپروچ روڈ کو بہتر بنایاجائے -انہوں نے کہاکہ ترقیاتی منصوبے پسماندہ عوام کا حق ہیں،ان کی ترقی کا حق جلد ازجلد لوٹائیں گے۔وزیراعلیٰ نے تونسہ شہر سے گزرنے والی انڈس ہائی وے اور دو طرفہ ڈرین کامنصوبہ بھی جلد مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ پنجاب میں حقیقی ترقی کا آغاز ہم نے کیا،بہت کچھ کر کے دکھائیں گے۔عوام کے مسائل کے حل کیلئے وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر شب و روز کوشاں ہیں۔ وزیرمملکت زرتاج گل، مشیر حنیف پتافی،ارکان پنجاب اسمبلی احمد علی دریشک،غلام محی الدین کھوسہ، ڈاکٹر شاہینہ کھوسہ، جاویداقبال قیصرانی،پارٹی رہنما سردار عبدالقادر کھوسہ، ایڈیشنل چیف سیکرٹری اربنائزیشن طاہر خورشید، کمشنر ڈیرہ غازی خان ڈویژن، آر پی او اوردیگر افسران بھی موجود تھے

About BBC RECORD

Check Also

ایف اے ٹی ایف پر پاکستان کے خلاف سعودی ووٹ پروپیگنڈہ ہے: دفتر خارجہ

Share this on WhatsAppپاکستان نے فائنینشل ایکشن ٹاسک فورس ’’ایف اے ٹی ایف‘‘ کے حوالے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے