کرونا وائرس سے امریکا میں دو لاکھ تک ہلاکتیں ہوسکتی ہیں: ڈاکٹر فاؤچی

بی بی سی ریکارڈ لندن نیوز؛ واشنگٹن
امریکا کے ایک سینیر سائنس دان اور صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مشیر برائے امورِ صحت ڈاکٹر انتھونی فاؤچی نے کہا ہے کہ ملک میں کرونا وائرس سے ایک سے دو لاکھ تک ہلاکتیں ہوسکتی ہیں۔

ڈاکٹر فاؤچی امریکا کے قومی ادارہ صحت میں شعبہ متعدی امراض کی تحقیق کے سربراہ ہیں۔ وہ صدر ٹرمپ کی کرونا وائرس کے بارے میں ٹاسک فورس کے اہم بھی رکن ہیں۔ انھوں نے سی این این سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’اس مہلک وائرس سے دس لاکھ تک اموات کا تو امکان نہیں ہے اور یہ بالکل انہونی اور ناممکن سی بات ہے۔‘‘

البتہ انھوں نے یہ پیشین گوئی کی ہے اس وَبا سے ایک لاکھ سے دو لاکھ تک اموات ہوسکتی ہیں اور مزید لاکھوں افراد متاثر ہوسکتے ہیں۔ڈاکٹر فاؤچی نے سی این این سے بات جاری رکھتے ہوئے کہا:’’ میں یہ نہیں چاہتا کہ اس تعداد کو حتمی سمجھ لیا جائے۔یہ ایک طرح کا متحرک ہدف ہے ،آپ غلط بھی ہوسکتے ہیں اور لوگوں کو گم راہ کرسکتے ہیں۔‘‘

ان سے جب کووِڈ-19 کے مرض کے ٹیسٹوں کی عدم دستیابی کے بارے میں پوچھا گیا تو انھوں نے کہا:’’اگر آپ موجودہ صورت حال کا چند ہفتے پہلے کی صورت حال سے موازنہ کریں تو اس وقت ہم کہیں زیادہ تعداد میں ٹیسٹ کررہے ہیں۔‘‘

ان سے جب یہ سوال کیا گیا کہ کب تک ٹیسٹ عام دستیاب ہوں گے اور اس کے بعد سفری اور کام کی پابندیاں کب ختم کردی جائیں گی؟ انھوں نے اس کے جواب میں یہ کہا :’’ یہ معاملہ اب ہفتوں تک محیط ہوگیا ہے۔یہ کل ہی پابندیاں ختم ہونے والی ہیں اور نہ یہ آیندہ ہفتے ختم ہو جائیں گی۔اس کام میں اس سے کچھ زیادہ وقت ہی لگے گا۔‘‘

About BBC RECORD

Check Also

حشد الشعبی امریکہ کے کسی بھی ممکنہ حملے کا جواب دینے کے لئے تیار ہے

Share this on WhatsAppعراق کی رضاکار فورس الحشد الشعبی نے اعلان کیا ہے کہ وہ ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے