کرایہ کی عمارتوں میں 100نئے پرائمری سکول قائم کرنے کیلئے علاقوں کی نشاندہی

کرایہ کی عمارتوں میں 100نئے پرائمری سکول قائم کرنے کے لیے علاقوں کی نشاندہی کرلی گئی ۔ منصوبے پر سالانہ 21 کروڑ روپے کے اخراجات آْئیں گے ۔ تفصیل کے مطابق ضلع لاہور میں نئے سکول قائم کرنے کے لیے اہم پیش رفت ہوئی ہے ۔ سی ای او ایجوکیشن اتھارٹی کی جانب سے شہر میں مختلف علاقوں کی نشاندہی کی گئی جن میں بابو صابو ، محمود بوٹی ، کینٹ ، واہگہ اور دیگر شامل ہیں جہاں سرکاری سکول نہیں ہیں ۔کم سے کم دس مرلے کی عمارتیں تلاش کی جائیں گی۔

سی ای او ایجوکیشن اتھارٹی پرویز اختر کاکہنا ہے منصوبے کا پی سی ون منظوری کے لیے پی اینڈ ڈی کو بھجوا دیا۔ پڑھانے کیلئے سرکاری سکولوں سے ان اساتذہ کو لیا جائے گا جو سرپلس ہیں اور دو سے تین سرکاری اساتذہ سمیت پرائیویٹ کوچز بھی رکھے جائیں گے جن کو آٹھ سے دس ہزار روپے ماہانہ دیا جائے گا۔اس وقت لاہور میں ڈھائی لاکھ بچے سکولوں سے باہر ہیں جس کی ایک وجہ سکولوں کی کمی بھی ہے

About BBC RECORD

Check Also

شیشہ بار پر چھاپہ، ڈانس پارٹی میں مصروف 4 لڑکیاں اور 18 لڑکے گرفتار

Share this on WhatsAppبی بی سی ریکارڈ لندن نیوز ؛ کراچی پولیس نے شیشہ بار ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے