سیناء: مصری فورسز کی کارروائی میں 15 مُشتبہ جنگجو ہلاک

مصر کے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سیناء میں پولیس نے ایک کارروائی میں 15 مشتبہ جنگجوؤں کو ہلاک کردیا ہے۔ وزارت داخلہ نے اتوار کواطلاع دی ہے کہ سکیورٹی فورسز اور جنگجوؤں کے درمیان بحرمتوسط کے کنارے واقع شہر العریش میں جھڑپ ہوئی ہے۔سکیورٹی اہلکاروں نے جب العریش میں مشتبہ جنگجوؤں کے ٹھکانے پر دھاوا بولا تو انھوں نے فائرنگ شروع کردی تھی اور وہ جوابی فائرنگ میں مارے گئے ہیں۔تاہم جنگجوؤں کی فائرنگ سے کوئی پولیس اہلکار زخمی نہیں ہوا ہے۔ بیان میں یہ نہیں بتایا گیا ہے کہ یہ جھڑپ کب ہوئی تھی۔

اس واقعے سے تین روز قبل بئرالعبد کے علاقے میں داعش کے ایک چیک پوائنٹ پر حملے میں ایک شہری اور آٹھ فوجی ہلاک ہوگئے تھے۔سکیورٹی فورسز کی جوابی کارروائی میں پندرہ جنگجو مارے گئے تھے۔

گذشتہ منگل کے روز دارالحکومت قاہرہ سے جنوب مغرب میں واقع 6اکتوبر شہر میں مصر کی کالعدم مذہبی سیاسی جماعت الاخوان المسلمون کے چھے ارکان پولیس کے ساتھ ایک جھڑپ میں مارے گئے تھے۔وزارت نے انھیں ’’دہشت گرد‘‘ قراردیا تھا اور کہا تھا کہ وہ دہشت گردی کی کارروائیوں کی منصوبہ بندی کررہے تھے۔قاہرہ میں گذشتہ ہفتے بھی پولیس نے دو جھڑپوں میں نو مشتبہ جنگجوؤں کو ہلاک کردیا تھا۔

واضح رہے کہ مصر کو شورش زدہ علاقے جزیرہ نما شمالی سیناء میں داعش سے وابستہ ایک مقامی جنگجو گروپ اور ماضی میں الاخوان المسلمون سے وابستہ مختلف جنگجو گروپوں کی مزاحمتی سرگرمیوں کا سامنا ہے۔ سیناء اور دوسرے علاقوں میں مصری سکیورٹی فورسز اور جنگجوؤں کے درمیان جھڑپوں میں سیکڑوں افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

About BBC RECORD

Check Also

عراق چہلم کے موقع پر کربلا میں کروڑوں زائرین حسینی کا اجتماع

Share this on WhatsAppبغداد: عراق سمیت دنیا کے بیشتر ملکوں میں شہدائے کربلا کا چہلم ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے