افغانستان میں صدارتی انتخابات، دارالحکومت کابل میں ٹرکوں پر پابندی

افغانستان میں آج ہونے والے صدارتی انتخابات کے موقع پرملک بھر بالخصوص دارالحکومت کابل میں سیکیورٹی کےفول پروف انتظامات کیے گئے ہیں۔ افغان حکام نے جمعرات کے روز ٹرکوں کے کابل میں داخلے پر پابندی عائد کردی تھی جس کا مقصد ہفتے کےروز صدارتی انتخابات سے قبل خودکش بم دھماکوں کی روک تھام کرنا ہے۔

افغانستان میں انتخابات پر تشدد کا خطرہ ہے۔خاص طور پر جب حال ہی میں طالبان نے انتخابی مہم کے مراکز، انتخابی ریلیوں اور صدارتی امیدواروں اوران کے دیگر اہداف کو نشانہ بناتے ہوئے خود کش حملوں کا ایک سلسلہ شروع کیا تھا۔

5 ستمبرکو کابل میں ٹرک بم دھماکے میں کم از کم 12 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔وزارت داخلہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ سیکیورٹی فورسز شہر کے داخلی راستوں اور چوکیوں پر نفری بڑھادی ہے۔ دہشت گردانہ حملوں کے خطرے کے پیش نظر دارالحکومت میں داخل ہونے سے روکیں گی۔

بیان میں کہا گیا ہے افغان پولیس دستے دارالحکومت داخلی راستوں پرتعینات ہیں۔ کل شام 5 بجے سے ٹرک کو کابل میں داخل ہونے سے روکنے کا حکم دیا گیا ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ انتخابات ختم ہونے تک وینوں کو شہر میں داخل ہونے سے بھی منع کیا گیا ہے۔

طالبان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ وہ امریکی حملہ آوروں اور ان کے کٹھ پتلیوں کی سکیورٹی کے تمام عناصراور دفاتر اورپولنگ مراکز کو نشانہ بنا کر اس جعلی کاروائی کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کی پوری کوشش کریں گے۔طالبان نے افغان شہریوں کو خبردار کیا ہےکہ وہ انتخابات کے دن پولنگ اسٹیشنوں سے دور رہیں اور خود کو خطرے میں نہ ڈالیں

About BBC RECORD

Check Also

بھارتی ایجنسی ’سی بی آئی‘ کے ایمنسٹی انٹرنیشنل کے دفاتر پر چھاپے

Share this on WhatsAppبھارت کی وفاقی تفتیشی ایجنسی نے ایمنسٹی انٹرنیشنل پر غیر ملکی مالی ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے