شمالی شام میں ترکی کا کوئی بھی آپریشن قابل قبول نہیں : امریکی وزیر دفاع

امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر کا کہنا ہے کہ شمالی شام میں ترکی کا کوئی بھی آپریشن "قابل قبول” نہیں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ واشنگٹن فرات کے مشرق میں آپریشن کے حوالے سے انقرہ کے ساتھ کسی معاہدے تک پہنچنے کی امید رکھتا ہے۔

منگل کے روز جاپان کے دورے میں اپنے ہمراہ موجود صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے ایسپر نے کہا کہ "اُن کی جانب سے یک طرفہ طور حرکت میں آنے کا کوئی بھی اقدام ہمارے لیے ناقابل قبول ہو گا … ہم ایسی کسی بھی فوجی مداخلت کو روک دیں گے جو شمالی شام میں امریکا، ترکی اور سیرین ڈیموکریٹک فورسز کے مشترکہ مفاد پر اثر انداز ہو”۔

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے 4 اگست کو اعلان کیا تھا کہ ترکی ،،، شمالی شام میں کرد پیپلز پروٹیکشن یونٹس کے زیر کنٹرول علاقے میں مشرقی فرات کا آپریشن کرے گا۔ ایردوآن کے مطابق انہوں نے روس اور امریکا کو اس آپریشن کے بارے میں آگاہ کر دیا ہے۔ ترکی کے صدر نے اپنے خطاب میں کہا کہ جب تک ہمیں تنگی کا سامنا رہے گا اس وقت تک خاموش رہنا ہمارے بس میں نہیں ہو گا۔

About BBC RECORD

Check Also

امریکی وزارت خزانہ حزب اللہ کی مقرب شخصیات پر پابندیاں عائد کر رہی ہے

Share this on WhatsAppامریکی وزارت خزانہ اُن لبنانیوں پر پابندیاں عائد کر دے گی جن ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے