پاکستانی فوج سعودی فوج کے شانہ بشانہ کھڑی ہے: ترکی بن عبداللہ الشبانہ

پاکستانی فوج نے باور کرایا ہے کہ وہ سعودی فوج کے شانہ بشانہ کھڑی ہے اور اسلام آباد اور ریاض نے اپنے دو طرفہ خصوصی تعلقات میں ارتقاء کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے تمام شعبوں میں تعاون مضبوط بنانے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ یہ موقف سعودی وزیر اطلاعات ترکی بن عبداللہ الشبانہ کی اسلام آباد میں پاکستان کے سینئر ذمے داروں، سیاست دانوں اور میڈیا پرسنز کے ساتھ ملاقات میں سامنے آیا۔ پاکستانی شخصیات میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیراعظم کی مشیر برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان اور پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجودہ نمایاں ترین ہیں۔

پاکستان کی مسلح افواج کی میڈیا انتظامیہ کی جانب سے جاری ایک بیان کے مطابق سعودی وزیر اطلاعات ترکی بن عبداللہ الشبانہ نے سعودی وزیر دفاع کے مشیر عبداللہ العتیبی کے ہمراہ جی ایچ کیو میں پاک فوج کے سربراہ سے ملاقات کی۔ اس موقع پر اسلام آباد میں سعودی سفیر نواف بن سعید المالکی بھی موجود تھے۔

پاک فوج کے بیان میں مزید کہا گیا کہ ملاقات کے دوران فریقین نے سیکورٹی صورت حال اور مشترکہ دل چسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ اس موقع پر پاک فوج کے سربراہ جنرل باجوہ نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان مشترکہ دفاعی تعاون کی ایک تاریخ ہے جس کو پاکستان بڑی قدر و منزلت کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاک فوج تمام سعبوں میں سعودی عرب کی مسلح افواج کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔ جنرل باجوہ نے شہزادہ بندر بن عبدالعزیز آل سعود کی وفات پر تعزیت کا بھی اظہار کیا۔


دوسری جانب پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے پاکستان اور سعودی عرب کے تعلقات کو سراہا۔ سعودی وزیر اطلاعات کے ساتھ بات چیت میں شاہ محمود نے باور کرایا کہ اسلام آباد ریاض کے ساتھ اپنے تعلقات کو بڑی اہمیت دیتا ہے۔ اس موقع پر جانبین نے تمام شعبوں میں تعاون مضبوط بنانے پر اتفاق کیا۔

پاکستانی وزیر خارجہ نے اہم علاقائی اور بین الاقوامی معاملات کے حوالے سے دونوں ملکوں کے درمیان ویژن میں موافقت کا ذکر کیا۔ شاہ محمود نے رواں سال فروری میں سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے پاکستان کے دورے کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس نے دونوں برادر ملکوں کے تعلقات کو جلا بخشی۔

پاکستانی وزیر خارجہ نے دونوں ملکوں کے درمیان کوآرڈی نیشن کونسل کے قیام کو دونوں ملکوں کے بیچ سیاسی، اقتصادی اور ثقافتی تعاون کے حوالے سے ایک اہم اقدام قرار دیا۔ انہوں نے پاکستانی حجاج کے کوٹے میں اضافے پر ایک بار پھر مملکت سعودی عرب کا شکریہ ادا کیا۔

سعودی وزیر اطلاعات نے وزیراعظم کی مشیر برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان سے بھی ملاقات کی۔ ملاقات میں ثقافت اور اطلاعات کے شعبوں میں تعاون خصوصی طور پر زیر بحث آیا۔ پاکستانی وزیر نے پاکستانی عوام کے دلوں میں سعودی عرب کی قیادت اور عوام کے لیے محبت کے جذبات کو باور کرایا۔

سعودی وزیر اطلاعات نے بھی سعودی عرب اور پاکستان کے تعلقات کی تاریخ کو سراہتے ہوئے ایک بار پھر باور کرایا کہ سعودی عرب کی قیادت پاکستان اور اس کے عوام کی سپورٹ اور معاونت کی شدید خواہش مند ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

پاک ایران فورسزکی بارڈر پرمشترکہ پیٹرولنگ سے متعلق ڈان اخبار کی خبرغلط ہے، آئی ایس پی آر

Share this on WhatsAppراولپنڈی: ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کا ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے