گوٹیرس کا تمام ممالک سے خلیج میں جہاز رانی کی آزادی یقینی بنانے کا مطالبہ

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے تمام ممالک پر زور دیا ہے کہ وہ خلیج کے علاقے میں جہاز رانی کی آزادی کو یقینی بنائیں۔ اس بات کا اعلان گوٹیرس کے ترجمان فرحان حق نے کیا۔اس حوالے سے فرحان کا کہنا تھا کہ سیکریٹری جنرل کا مطالبہ بالکل واضح ہے، انہوں نے تمام ممالک پر زور دیا ہے کہ جہاز رانی کی آزادی کو ہر جگہ یقینی بنایا جائے جس میں آبنائے ہرمز بھی شامل ہے۔

فرحان کے مطابق گوٹیرس اس بات کی تصدیق چاہتے ہیں کہ تمام ممالک خلیج کے علاقے میں جارحیت کم کرنے کی کوششیں کر رہے ہیں۔ گوٹیرس ایسے کسی بھی اقدامات سے گریز کے خواہاں ہیں جن سے مستقبل میں کشیدگی میں مزید اضافہ ہو۔خلیج کے علاقے میں کشیدگی میں اضافہ جاری ہے۔ امریکا کی جانب سے خلیج عربی میں بحری کمک کی دوسری کھیپ ارسال کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ یہ پیش رفت ایران کی جانب س ایک برطانی تیل بردار جہاز کو تحویل میں لینے کی ناکام کوشش کے بعد سامنے آئی ہے۔ اس دوران ایرانی ذمے داران اپنے ایک تیل بردار جہاز کے حراست میں لیے جانے پر بہت جلد برطانیہ کے خلاف انتقامی کارروائی کی دھمکی دے چکے ہیں۔

دوسری جانب ایران کی ایک اہم مذہبی شخصیت کاظم صدیقی کا کہنا ہے کہ ایرانی تیل بردار جہاز کو حراست میں لینے کی جرات پر تہران عنقریب برطانیہ کے چہرے پر ایک طمانچہ رسید کرے گا۔ کاظم نے یہ بات گذشتہ روز نماز جمعہ سے قبل اپنے خطبے میں کہی۔

برطانیہ نے اپنے طور پر سخت لہجہ اختیار کرتے ہوئے ایران کی جانب سے برطانوی تیل بردار جہاز کو حراست میں لینے کی کوشش کی مذمت کی ہے۔ برطانیہ نے خلیج عربی میں اپنا دوسرا بحری جنگی جہاز بھیجنے کا اعلان کیا ہے۔ اس نے باور کرایا ہے کہ امریکا کے ساتھ بات چیت جاری رکھی جائے گی تا کہ خطے میں عسکری وجود کو مضبوط بنایا جا سکے۔ برطانیہ نے ایران پر زور دیا ہے کہ وہ خطے میں صورت حال کو جارحیت سے دوچار نہ کرے اور بین الاقوامی قانون کے مطابق جہاز رانی کی آزادی کو یقینی بنائے۔

About BBC RECORD

Check Also

ترکی کو F 35 امریکی طیاروں کی فروخت بند، ترک ہواباز بیدخل

Share this on WhatsAppامریکا نے کہا ہے کہ وہ ترکی کو ایف – 35 طرز ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے