مودی چوکیدار نہیں ، رشوت خوری میں حصہ دار ہیں: سدارامیا

بھارت: میسور کے مہاراجہ کالج میدان میں میسور و کورگ پارلیمانی حلقہ، چامراج نگر اور منڈیا حلقوں کے کانگریس اور جنتا دل ( یس ) کے مشترکہ امیدواروں کے حق میں منعقدہ انتخابی مہم میں سابق وزیر اعظم و جنتا دل (ایس) کے قومی صدر ایچ ڈی دیوے گوڈا ، سابق ریاستی وزیر اعلیٰ و سینئر کانگریس لیڈر شری سدارامیا ،سابق مرکزی وزیر سی ایم ابراہیم، میسور ضلع کے انچارج وزیر جی ٹی دیوے گوڈا ، سابق انچارج وزیر ڈاکٹرایچ سی مہادیواپا اور دونوں کانگریس اور جنتا دل ( یس ) کے اہم قائدین نے حصہ لیا۔

جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے سدارامیا نے وزیر اعظم نریندرمودی پر الزام عائد کیا اور کہا کہ مودی اس دیش کے چوکیدار نہیں ہیں بلکہ رشوت خوری میں حصہ دار ہیں۔سب سے بڑی حقیقت یہ ہے کہ مودی بہت بڑے جھوٹے ہیں اور میسور و کورگ کے بھارتیہ جنتا پارٹی کے امیدوار پرتاب سمہا مودی کے اسسٹنٹ ہیں۔ انہوں نے کہاکہ گزشتہ پانچ برسوں میں اب تک مودی نے 89ملکوں کا دورہ کرکے 1690کروڑ روپئے خرچ کئے ہیں۔ جب کہ بحیثیت وزیر اعظم انہیں ملک کے دیہاتوں کو دورہ کرنا چاہئے تھا ۔ انہوں نے بتایاکہ گزشتہ پانچ برسوں میں صرف بیرونی ممالک کا دورہ اور "من کی بات’’ہی نریندر مودی کی اہم نمایاں کارگردگی ہے۔ کسانوں کی حفاظت کی بجائے وجئے ملیاء ، امبانی اور ادانی کی حفاطت کی ہے۔سدارامیا نے کہاکہ گزشتہ انتخابات کے موقع پر مودی نے کسانوں کی آمدنی کو دگنا کرنے اور بے روزگاری کے مسئلے کو مکمل طور پر ختم کرنے کا وعدہ کیا تھا ، کیا۔ انہوں نے اس وعدے کو پورا کیا؟۔ اس کے برعکس مودی نے رافیل گھوٹالے کے ذریعہ 30,000کروڑ روپئے لوٹ لئے۔ بنگلور میسور نیشنل ہائی وے کی تعمیر کے تعلق سے سدرامیا نے کہا کہ مودی اس راستے کے تعمیر ی کام کا کریڈیٹ اپنے سر لینا چاہتے ہیں۔جب کہ اس راستے کی ترقی کا سہرا سابق مرکزی وزیر برائے سرفیس ٹرانسپورٹ آسکر فرنانڈیز کے سرجاتا ہے۔ اس میں پرتاب سمہا کا کوئی رول نہیں ہے ۔

انہوں نے کہاکہ اب تک پرتاب سمہا نے میسور و کورگ کی ترقی کے لئے کچھ نہیں کیا ہے ۔ اور کورگ میں سیلاب کی وجہ سے کافی نقصان ہونے کے باوجود مرکزی حکومت نے ایک روپیہ کا بھی مالی تعاون نہیں کیا۔مرکزی حکومت کے زیر انتظام انکم ٹیکس محکمہ کی جانب سے کئی کانگریس اور جنتا دل ( یس ) کے قائدین اور انکے معاونین کے گھروں پر چھاپوں کی کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ریاستی بھارتیہ جنتا پارتی کے صدر بی یس یڈیو رپا نے آپریشن کمل کے موقع پر جنتا دل ( یس ) کے 20اراکین اسمبلی کو 30کروڑ روپئے دینے کا آفر پیش کیا تھا۔ اس تعلق سے محکمہ انکم ٹیکس کو کانگریس اور جنتا دل( یس ) کے کئی قائدین کی جانب سے شکایت کے باوجود بی یس ا یڈی یورپا کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم و جنتا دل ( یس) کے قومی صدر ہچ ڈی دیوے گوڈا نے پارلیمانی حلقے میسور و کورگ ، منڈیا اور چامراج نگر کے تمام ووٹروں سے اپیل کی کہ اس دیش سے فرقہ پرستی اور نفرت کی سیاست کو ختم کرنے کے لئے جنتا دل ( یس ) اور کانگریس کے امیدواروں کو ووٹ دیں ۔

About BBC RECORD

Check Also

ترکی کو F 35 امریکی طیاروں کی فروخت بند، ترک ہواباز بیدخل

Share this on WhatsAppامریکا نے کہا ہے کہ وہ ترکی کو ایف – 35 طرز ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے