پاکستانی تاریخ میں پہلا بین الاقوامی آن کیمرہ ملزم کا ٹرائل

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان کی تاریخ میں پہلا بین الاقوامی ٹرائل ہوا اور کوٹ لکھپت جیل میں قتل کیس کی آن کیمرہ سماعت کو ناروے کی عدالت سے منسلک کردیا گیا۔لاہور میں پاکستانی نژاد نارویجن خاتون کے قتل کیس کی سماعت کے لیے عالمی کیمرہ ٹرائل کا انعقاد ہوا تو خاتون کے قتل کے الزام میں گرفتار ملزمان کو ناروے کی عدالت میں پیش کیا گیا۔

لاہور کے علاقے شادرہ کی رہائشی ثوبیہ کو اس کے شوہر اسحاق نے اپنے ملازم کے ذریعے قتل کروادیا تھا تاہم پولیس کی جانب سے دونوں ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔ قتل کی تحقیقات کے لیے اوسلو کی تفتیشی پولیس اور گواہ ناروے سے لاہور آئے اور تحقیقات کیں۔

ناروے کی عدالت میں قتل کے مقدمے کی سماعت ہوئی تو کوٹ لکھپت جیل میں آن کیمرہ سماعت کو ناروے کے شہر اوسلو کی عدالت سے منسلک کیا گیا اور بذریعہ انٹرنیٹ ملزم کو ناروے کی عدالت میں پیش کیا گیا۔

اس موقع پر کوٹ لکھپت جیل میں ملزمان، پراسکیوشن اور گواہان بھی موقع پر موجود تھے۔ اس ٹرائل کے انعقاد میں پنجاب سیف سٹی اتھارٹی نے مدد کی۔واضح رہے کہ ملزم اسحاق پر اپنی نارویجن بیوی ثوبیہ کو چوکیدار کی مدد سے قتل کروانے کا الزام ہے اور دونوں میاں بیوی کے پاس ناروے کی شہریت ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

ممبئی کے ڈونگری میں مہاڈا کی چار منزلہ عمارت گری، 12 افراد ہلاک

Share this on WhatsApp ممبئی،جنوبی ممبئی کے ڈونگری میں منگل کومہاڈا کی چار منزلہ رہائشی ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے