حوثی ملیشیا الحدیدہ سے طاقت کے استعمال کے بغیر نہیں نکلے گی: یمن

یمن کے ساحلی شہر الحدیدہ میں حکومتی عمل داری کے لیے تشکیل دی گئی کمیٹی کے سربراہ میجر جنرل صغیر بن عزیز نے کہا ہے کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ حوثی ملیشیا نے امن کی تمام کوششیں ناکام بنا دی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ الحدیدہ سے حوثی ملیشیا پرامن طریقے سے نہیں بلکہ طاقت کے استعمال سے نکلے گی۔

عربی چینل کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائیٹ’ٹویٹر’ پو پوسٹ کردہ ایک بیان میں یمن کے حکومتی عہدیدار نے کہا کہ یمن کے لیے اقوام متحدہ کے امن ایلچی مارٹن گریفتھس نے امن کے قیام کے لیے جو بھی اقدام کیا، حوثیوں نے اس کی پابندی نہیں کی۔

میجر جنرل صغیر بن عزیز کا کہنا تھا کہ حوثی ملیشیا کی یہ شہرت ہےکہ یہ لوگ امن کی زبان نہیں سمجھتے۔ انہیں ہرعلاقے سے طاقت سے نکالا گیا۔ کوئی ایک واقعہ ایسا نہیں جس میں حوثیوں کو صلح یا مفاہمتی معاہدے کے تحت نکالا گیا ہو۔

ان کا کہنا تھا کہ مارٹن گریفتھس اس وقت تک صنعاء نہیں جائیں گے جب تک حوثی ملیشیا الحدیدہ شہر اور بندرگاہ حکومت کے حوالے کرنے کے معاہدے پرعمل درآمد کی یقین دہانی نہیں کرائے گی۔

About BBC RECORD

Check Also

ترکی کو F 35 امریکی طیاروں کی فروخت بند، ترک ہواباز بیدخل

Share this on WhatsAppامریکا نے کہا ہے کہ وہ ترکی کو ایف – 35 طرز ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے