افغانستان میں طالبان اور سیکیورٹی فورسز کے درمیان جھڑپ، 36 اہلکار جانبحق

کابل: افغانستان کے صوبے بادغیس میں طالبان اور فوج کے درمیان گھمسان کی جنگ دوسرے روز بھی جاری ہے جس کے دوران مجموعی ہلاکتیں 66 ہوگئی ہیں۔
خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان کے صوبے بادغیس کے ضلع بالا مرغاب میں بدھ اور جمعرات کی شب طالبان جنگجوؤں نے حملہ کر کے کئی چیک پوسٹوں پر قبضہ کرلیا تھا۔ افغان فوج کے دستے پولیس کی مدد کو پہنچے۔

ضلعی گورنر وارث شہرزاد نے میڈیا کو بتایا کہ دو روز سے جاری جھڑپ میں 36 افغان فوجی ہلاک ہوئے ہیں جب کہ 30 طالبان جنگجو بھی مارے گئے اور کئی پولیس چیک پوسٹوں سے قبضہ واگزار کروالیا گیا ہے، متاثرہ علاقے میں افغان فوج کے مزید دستے بھی بھیجے جا رہے ہیں۔

دوسری جانب طالبان کے ترجمان نے حملے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ بالا مرغاب پر حملہ 4 سمتوں سے کیا گیا تھا جس میں 30 سے زائد افغان سیکیورٹی اہلکار ہوئے جب کہ جھڑپ میں طالبان جنگجوؤں کے جانی نقصان کے حوالے سے کسی قسم کا تبصرہ نہیں کیا گیا۔

About BBC RECORD

Check Also

امریکی وزارت خزانہ حزب اللہ کی مقرب شخصیات پر پابندیاں عائد کر رہی ہے

Share this on WhatsAppامریکی وزارت خزانہ اُن لبنانیوں پر پابندیاں عائد کر دے گی جن ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے