امریکا وینزویلا میں روس کے کردار پر خاموش تماشائی نہیں بنا رہے گا: مائیک پومپیو

امریکہ ( مانیٹرنگ ڈیسک ) وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے روس پر وینزویلا میں اپنی فوجی موجودگی کے ذریعے کشیدگی کو بڑھاوا دینے کا الزام عاید کیا ہے اور خبردار کیا ہے کہ واشنگٹن اس صورت حال میں خاموش تماشائی بنا کھڑا نہیں رہے گا۔

انھوں نے روسی وزیر خارجہ سرگئی لاروف سے سوموار کو ٹیلی فون پر گفتگو کرتے ہوئے وینزویلا میں روس کی بڑھتی ہوئی فوجی موجودگی کی مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ اس سے اس ملک میں سیاسی بحران نے طول پکڑا ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ایک بیان کے مطابق مائیک پومپیو نے سرگئی لاروف سے کہہ دیا ہے کہ ’’ روس جس طرح وینزویلا میں کشیدگی کو بڑھاوا دے رہا ہے ،اس پر امریکا او ر علاقائی ممالک خاموش نہیں رہیں گے‘‘۔

مائیک پومپیو نے کہا کہ ’’ وینزویلا میں نیکولس مادورو کی غیر قانونی حکومت کی حمایت میں روس کے فوجی اہلکاروں کی مسلسل آمد کا سلسلہ جاری ہے ،اس سے بحران کے طول پکڑنے کا خدشہ ہے اور اس سے وینزویلا کے عوام کے مصائب میں بھی اضافہ ہوگا حالانکہ ان کی اکثریت عبوری صدر جوآن گائیڈو کی حمایت کررہی ہے ‘‘۔

گائیڈو کو امریکا ، لاطینی امریکا کے بیشتر ممالک اور یورپ کی حمایت حاصل ہے جبکہ روس اور چین سوشلسٹ صدر مادورو کی حمایت کررہے ہیں۔اسی لیے مائیک پومپیو نے روس پر زور دیا ہے کہ وہ اپنا غیر تعمیری کردار ختم کردے اور گائیڈو کی حمایت کرے ۔

About BBC RECORD

Check Also

صدر ٹرمپ عوام کو منقسم کرنے کی کوشش میں ہیں، جیمز میٹس

Share this on WhatsAppسابق امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس نے الزام عائد کر دیا ہے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے