چینی ہیکروں نے امریکی بحریہ کا حساس ڈیٹا چوری کرلیا، امریکا کا الزام

واشنگٹن: امریکی انتظامیہ نے الزام عائد کیا ہے کہ چینی ہیکروں نے ان کی بحریہ کے کنٹریکٹر کا حساس ڈیٹا چوری کرلیا ہے۔ خبررساں ادارے کے مطابق امریکا حکام نے الزام عائد کیا ہے کہ چینی ہیکروں نے امریکی بحریہ کے کنٹریکٹر کا انتہائی حساس ڈیٹا چوری کرلیا ہے جس کی تحقیقات امریکی ادارہ ایف بی آئی کررہا ہے۔ امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے مطابق امریکی اہلکار نے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ چین کی جانب سے جس مواد تک رسائی حاصل کی گئی ہے اس میں سی ڈریگن کے نام سے موجود پراجیکٹ سمیت بحری آبدوزوں کے لیے مخصوص یونٹ کی الیکٹرانک وار فیئر لائبریری بھی ہے۔

امریکی اہلکار کے مطابق ہیکروں کا نشانہ بننے والے کنٹریکٹر امریکی فوجی ادارے سے ہی وابستہ ہیں جو آبدوزوں اور زیرِآب استعمال ہونے والے اسلحے پر ریسرچ کرتے ہیں جب کہ امریکی ملٹری کے منصوبوں سے تعلق رکھنے والی ٹیکنالوجی جو ابھی تکمیل کے مراحل سے گزر رہی ہے، جبکہ چوری شدہ منصوبوں میں سپرسونک میزائل اور 2020 تک آبدوزوں پر میزائل شکن نظام منسلک کرنے کا منصوبہ بھی شامل ہے، جو انتہائی تشویشناک ہے۔

امریکی بحریہ کے کمانڈر بِل سپیکس نے ڈیٹا چوری ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی وزیردفاع نے سائبر سیکیورٹی کو واقعے کا جائزہ لینے کا حکم دے دیا ہے جب کہ امریکی نیول ایف بی آئی کی مدد سے تحقیقات کررہی ہیں۔

About BBC RECORD

Check Also

انڈونیشیا میں زلزلہ، ہلاکتوں کی تعداد 387 ہو گئی

Share this on WhatsAppجکارتہ: انڈونیشی جزیرے لومبوک پر آنے والے زلزلے کے نتیجے میں ہونے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے