سعودی عرب کے دروازے تمام مسلمانوں کے واسطے کھلے ہیں: خالد الفیصل

سعودی عرب: مکہ مکرمہ کے گورنر ، خادم حرمین شریفین کے مشیر اور سعودی حج کمیشن کے سربراہ شہزادہ خالد الفیصل نے اتوار کے روز رواں سال حج سیزن کے کامیابی کے ساتھ اختتام پذیر ہونے کا اعلان کر دیا۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ "اس ملک کے دروازے تمام مسلمانوں کے لیے کُھلے ہیں ، نہ ہم ایرانیوں کو روکتے ہیں اور نہ کسی اور ملک کے شہریوں کو”۔

ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے خالد الفیصل نے بتایا کہ مکہ مکرمہ میں بیس لاکھ سے زیادہ حجاج نے دنیا کی جانب امن اور اخوت کا ہاتھ بڑھایا۔ انہوں نے واضح کیا کہ خدمات کی فراہمی ، اقدامات ، ہدایات اور ثقافت کے لحاظ سے رواں برس حج سیزن "خصوصیت” کا حامل رہا۔

مکہ کے گورنر نے زور دے کر کہا کہ حج اور عمرہ کوئی سیاحت نہیں بلکہ عبادت ہے۔ انہوں نے باور کرایا کہ سیاحت تو مقامات مقدسہ سے باہر ہوتی ہے۔

مکہ مکرمہ کے گورنر نے رواں برس کامیاب حج سیزن پر خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔

خصوصی انٹرویو میں مکہ مکرمہ کے گورنر نے بتایا کہ مملکت نے رواں سال حجاج کرام کی ریکارڈ تعداد کو بسوں اور ٹرینوں کے ذریعے منتقل کیا۔ انہوں نے کہا کہ 20 لاکھ سے زیادہ حجاج کی منتقلی پہلے کے مقابلے میں مختصر وقت میں عمل میں لائی گئی۔

شہزادہ خالد الفیصل نے باور کرایا کہ مملکت نے خطے میں جاری تنازعات اور بحرانات سے دُور رہتے ہوئے بیت اللہ آنے والے حجاج کرام کے لیے بہترین خدمات کی فراہمی پر اپنی توجہ مرکوز کی۔

شہزادہ خالد الفیصل نے کہا کہ ” 2030 تک معتمرین اور حجاج کرام کی سالانہ تعداد تین کروڑ تک پہنچانے کے لیے مملکت بھرپور عزم رکھتی ہے۔ اس سلسلے میں مقامات مقدسہ کے لیے ترقیاتی منصوبہ تیار کر کے اسے مکہ مکرمہ میں جاری منصوبوں کے ساتھ مربوط کیا جا رہا ہے اور جلد ہی اس پر عمل درامد شروع کر دیا جائے گا”۔

About BBC RECORD

Check Also

ٹرمپ نے کانگرس کو 3000 امریکی فوجیوں کی سعودی عرب میں تعیناتی بارے آگاہ کردیا

Share this on WhatsAppامریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کانگرس کو باضابطہ طور پر 3000 امریکی ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے