الیکشن دھاندلی؛ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے سربراہ کے گھر چھاپہ

ورجینیا: امریکی تحقیقاتی ادارے ایف بی آئی نے گزشتہ برس ہونے والے صدارتی انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات کرتے ہوئے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے سابق سربراہ پال مانافورٹ کے گھر پر چھاپہ مارا ہے۔

خبر ایجنسی کے مطابق پال مانافورٹ کے ترجمان نے چھاپے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ 26 جولائی کو ایف بی آئی ایجنٹس نے رات گئے اچانک ورجینیا کے شہر الیگزینڈریا میں ان کے گھر پر چھاپا مارا اور کئی دستاویزات و سامان قبضے میں لے لیا۔

ایف بی آئی نے پال مانافورٹ کے گھر سے ٹیکس دستاویزات اور غیر ملکی بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات بھی ضبط کی ہیں۔ ترجمان جیسن ملونی نے بتایا کہ مانافورٹ تحقیقات میں سیکیورٹی ایجنسیوں سے مکمل تعاون کررہے ہیں۔ اس چھاپے سے ایک روز قبل 25 جولائی کو پال مانافورٹ الیکشن میں روسی مداخلت کی تحقیقات کرنے والی سینیٹ کی انٹیلی جنس کمیٹی کے سامنے پیش ہوئے تھے جہاں ان سے تفتیش کی گئی تھی۔

پال مانافورٹ جون 2016 سے اگست تک ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم کے سربراہ رہے اور غیرملکی حکومتوں سے تعلقات اور پیسے لینے کے الزام عائد ہونے کے بعد مستعفی ہوگئے تھے۔ وہ جون 2016 میں روسی وکیل سے ڈونلڈ ٹرمپ کے بیٹے اور داماد کی ملاقات میں بھی شریک تھے جس کا مقصد مبینہ طور پر صدارتی امیدوار ہلیری کلنٹن کو نقصان پہنچانے والی معلومات حاصل کرنا تھا۔

واضح رہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے روس کے ساتھ گٹھ جوڑ اور الیکشن میں دھاندلی کے الزامات کو مسترد کردیا ہے جبکہ ایف بی آئی 2016 کے صدارتی الیکشن میں دھاندلی اور روسی مداخلت کی تحقیقات کررہی ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

’سعودی صرف مغرب کی ہمدردیاں حاصل کرنا چاہتے ہیں‘

Share this on WhatsAppقطر کے وزیر خارجہ شیخ محمد بن عبدالرحمن الثانی نے ڈی ڈبلیو ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے