ننکانہ میں جاگیردار نے گھریلو ملازمہ کو زندہ جلادیا

پاکستان: ننکانہ صاحب: نواحی گاؤں میں درندہ صفت جاگیردار نے معمولی بات پر گھریلو ملازمہ کو زندہ جلادیا۔
بیورو چیف کے مطابق ننکانہ صاحب کے نواحی چک 19 میں ایسا واقعہ پیش آیا جس پر شیطانیت بھی شرما گئی مگر آسمان ٹوٹا نہ زمین پھٹی۔ شقی القلب جاگیردار نے پٹرول چھڑک کر اپنی ملازمہ کو زندہ جلادیا۔

ملازمہ فریاد کرتی رہی لیکن ظالم جاگیردار پر کوئی اثر نہ ہوا اور نہ ہی فوزیہ بی بی کی مدد کیلئے کوئی آیا۔ قانون نافذ کرنے والے ادارے بھی بااثر جاگیردار کے آگے بے بس نظر آتے ہیں۔ پولیس نے بھی جاگیردار کے خلاف تاحال کوئی کارروائی کی نہ ہی کسی حاکم نے واقعے کا نوٹس لیا۔ بااثر ملزم بدستور قانون کی گرفت سے آزاد ہے۔

پولیس کے مطابق بااثر جاگیردار نے 5 بچوں کی ماں فوزیہ بی بی کو پیشگی لی گئی رقم واپس نہ کرنے پر جلایا۔ فوزیہ بی بی کو تشویشناک حالت میں فیصل آباد الائیڈ اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئی۔ یوں غربت کے ہاتھوں ایک اور زندگی کا چراغ گل ہوگیا۔ لیکن سوال یہ ہے کہ ظالم کب قانون کی گرفت میں آئے گا۔ مظلوم فوزیہ کی فریاد پر یقینا قانون قدرت حرکت میں آئے گا اور ظالم جاگیردار کو دنیا میں نہیں تو آخرت میں ضرور سزا بھگتنی ہی ہوگی۔

About BBC RECORD

Check Also

فیصلہ خلاف آئے تو عدلیہ کو بدنام نہ کریں: چیف جسٹس

Share this on WhatsAppپاکستان کی اعلیٰ ترین عدالت کے چیف جسٹس نے کہا ہے کہ ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے