دنیا کے چند حیران کردینے والے فوارے

دنیا میں بعض ایسے حیران کر دینے والے فن پارے ہیں جنہیں دیکھ کر انسانی آنکھ دنگ رہ جاتی ہے اور یہاں ہم آپ کو بتائیں گے ایسے فواروں کے بارے میں جنہیں دیکھ کر آپ بھی داد دیئے بغیر نہیں رہ پائیں گے۔

میجک ٹیپ، اسپین:

اسپین کے شہر کیڈز میں واقع ہوا میں معلق پانی کا نلکہ دنیا کی حیران کن فن تعمیر میں سے ایک ہے جسے دیکھ کر یہی گمان ہوتا ہے کہ کسی بھی سہارے کے بغیر میں معلق نلکے میں سے پانی بہہ رہا ہے تاہم حقیقت اس کے برعکس ہے۔ اگر فوارے کے قریب جا کر اس کا مشاہدہ کیا جائے تو معلوم ہوگا کہ بظاہر نلکے سے بہنے والے پانی کے اندر ایک پائپ موجود ہے جو نلکے کا وزن برداشت کرنے کے علاوہ پریشر سے پانی بھی چھوڑتا ہے اور یوں محسوس ہوتا ہے کہ ہوا میں لٹکے نلکے میں سے پانی بہہ رہا ہے۔

بانپو برج، جنوبی کوریا:

بانپو برج دنیا کا طویل ترین فوارہ پل ہے جہاں سے ایک منٹ کے دوران 190 ٹن پانی کا اخراج ہوتا ہے جب کہ اس پل کی خاص بات یہ ہے کہ یہ دنیا کا طویل ترین ایل ای ڈی فوارہ ہے جسے گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں بھی شامل کیا گیا ہے۔

نائن فلوٹنگ فاؤنٹین، جاپان:

نائن فلوٹنگ فاؤنڈین کو جاپانی اور امریکن ماہرین نے 1970 میں تعمیر کیا جسے آج بھی دیکھ کر انسان حیرت میں پڑ جاتا ہے۔ سمندری پانی کے اندر ہوا میں معلق فواروں سے بہنے والا پانی سمندر کی خوبصورتی کو مزید بڑھا دیتا ہے۔ لیکن اس کی حقیقت بھی یہی ہے کہ فواروں کو ایک پائپ کی سلاخ کی مدد سے لٹکایا گیا ہے جس میں سے پانی خارج ہوتا ہے اور یوں گمان ہوتا ہے کہ ہوا میں معلق فوارے سے پانی بہہ رہا ہو۔

کرسٹل ورلڈ، آسٹریا

کرسٹل ورلڈ آسٹریا کا ایک میوزیم ہے جس میں گھاس سے پوشیدہ چہرہ نما فوارہ اس قدر جاذب نگاہ ہے کہ انسان اسے دیکھا چلا جائے۔ خوبصورت پہاڑیوں سے ٹھکے ہوئے علاقے میں چہرہ نما فوارے سے نکلنے والا پانی ایک تالاب میں جمع ہوتا ہے جو اس کی خوبصورت کو مزید بڑھا دیتا ہے اور 24 گھنٹے چہرہ نما فوارے سے پانی بہتا رہتا ہے۔

About BBC RECORD

Check Also

انسان کا نام و نشان مٹ جائے گا، 16 ہزار سائنسدانوں کی وارننگ جاری

Share this on WhatsAppنیویارک: دنیا بھر سے 184 ممالک کے 16 ہزار سائنس دانوں نے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے